سپریم کورٹ: وفاقی اسپتالوں کی صوبوں کو منتقلی غیر آئینی قرار، تفصیلی فیصلہ

سپریم کورٹ: وفاقی اسپتالوں کی صوبوں کو منتقلی غیر آئینی قرار، تفصیلی فیصلہ

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے جناح اسپتال (جے پی ایم سی) اور قومی ادارہ برائے امراض قبل( این آئی سی وی ڈی) کی صوبہ سندھ کو منتقلی غیر آئینی قرار دے دی ہے۔ عدالت عظمیٰ نے شیخ زید اسپتال لاہور کی بھی صوبائی حکومت کو منتقلی خلاف آئین قرار دی ہے۔

سپریم کورٹ نے اسٹیل مل کی زمین فروخت کرنے سے روک دیا

ہم نیوز کے مطابق وفاقی اسپتالوں کی صوبوں کو منتقلی سے متعلق کیس کا تفصیلی فیصلہ سپریم کورٹ نے جاری کردیا ہے۔

تفصیلی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ اٹھارہویں ترمیم کی توثیق کا فیصلہ سپریم کورٹ پہلے ہی کرچکی ہے۔ عدالت عظمیٰ نے لکھا ہے کہ جناح اسپتال  اور این آئی سی وی ڈی کی سندھ کو منتقلی غیرآئینی ہے۔ عدالتی فیصلے میں این آئی سی ایچ اور این ایم پی کی صوبے کو منتقلی بھی غیر آئینی قرار دی گئی ہے۔

ہم نیوز کے مطابق سندھ اسمبلی کا منظور شدہ این آئی سی وی ڈی ایکٹ 2014 غیر آئینی قرار دیا گیا ہے۔ عدالت عظمیٰ نے شیخ زید اسپتال لاہور کی صوبائی حکومت کو منتقلی بھی غیر آئینی قرار دیتے ہوئے واضح کیا ہے کہ شیخ زید اسپتال صوبے کو دینے کا فیصلہ وزیراعظم نے کیا تھا، کابینہ نے نہیں کیا تھا۔

سپریم کورٹ آف پاکستان نے کہا ہے کہ این آئی سی ایچ 1990 میں جے پی ایم سی سے علیحدہ ہوکر وفاق کو منتقل ہوا تھا۔

سپریم کورٹ: چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا خان  کیخلاف درخواست سماعت کے لئے مقرر

عدالتی فیصلے کے مطابق اٹھارہویں ترمیم عمل درآمد کمیشن نے اپنی حدود سے تجاوز کیا تھا۔ عدالت عظمیٰ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ جے پی ایم سی اور این آئی سی وی ڈی کا وفاقی ادارے ہونا پہلے سے تسلیم شدہ ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز