منی گرام کا پاکستان میں سرمایہ کاری 1 ارب ڈالر تک بڑھانے کا فیصلہ

منی گرام کا پاکستان میں سرمایہ کاری 1 ارب ڈالر تک بڑھانے کا فیصلہ

فوٹو: فائل

اسلام آباد: منی گرام نے پاکستان میں سرمایہ کاری ایک ارب ڈالر تک لے جانے کا فیصلہ کر لیا۔

منی گرام کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ولیم الیگزینڈر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سال 2020 تک منی گرام کی پاکستان میں سرمایہ کاری بڑھا کر 1 ارب ڈالر تک لے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس وقت پاکستان میں 60 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لیے پاکستان نے پیش رفت کی ہے اور منی لانڈرنگ کی روکنے کے لیے پاکستان میں 25 کروڑ ڈالر خرچ کر رہے ہیں۔ رقوم بھیجنے اور موصول کرنے والے کی شناخت یقینی بنائی جائے گی۔

ولیم الیگزینڈر نے کہا کہ پاکستان ایک بڑی مارکیٹ ہے اور ہم پاکستان میں اپنا کاروبار بڑھانے جا رہے ہیں۔ پاکستان میں قانونی طریقے سے رقوم کی ترسیل کو یقینی بنایا جائے گا۔

اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان سے منی گرام کے چیئرمین کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی۔ وزیر اعظم نے منی گرام کمپنی کو پاکستان میں کاروبار کے لیے تمام سہولتوں کی یقین دہانی کرائی۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ حکومت تارکین وطن کو پاکستان پیسہ بھجوانے میں تمام سہولتیں فراہم کرے گی۔

یہ بھی پڑھیں سخت فیصلوں کی بدولت معیشت بہتر ہو رہی ہے، حفیظ شیخ

چیئرمین منی گرام ولیم الیگزینڈر نے وزیر اعظم کو کمپنی کی پاکستان میں سرگرمیوں سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ منی گرام موجود حکومت کے ویژن کے مطابق کام کر رہی ہے جبکہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو رقم کی محفوظ اور جلد منتقلی کی سہولت فراہم کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی کمپنی منی گرام دنیا بھر میں رقوم کی منتقلی کی خدمات فراہم کرتی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز