ایچ آئی وی ایڈز پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے، ڈاکٹر ظفر

اسلام آباد: جعلی و غیر رجسٹرڈ ادویات کے خلاف کریک ڈاؤن

فوٹو: فائل

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ ایشیا میں ایچ آئی وی ایڈز پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔

ہیلتھ سروس اکیڈمی میں سالانہ دسویں پبلک ہیلتھ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ ایڈز پھیلنے کی بڑی وجہ سرنجوں کا دوبارہ استعمال اور غیر محفوظ انتقال خون ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں کو اپنا کردار ادا کرتے ہوئے سرنجوں کے دوبارہ استعمال کی حوصلہ شکنی کرنی چاہیے۔ انجکشن کے ذریعے نشہ کرنے والے افراد میں ایڈز کی شرح 48 فیصد تک پہنچ چکی ہے۔ عوام کو ایچ آئی وی ایڈز سے بچاؤ کے لیے خود بھی احتیاطی تدابیر اختیار کرنی چاہیے کیونکہ صرف حکومتی اقدام سے اس مرض پر قابو پانا مشکل ہے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ اس حکومت نے پہلی بار صحت کو قومی ترجیح دی ہے اور صحت کے بجٹ کو بڑھانے کا عمل جاری ہے۔ شوگری مشروبات اور سگریٹ پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کے مد میں حاصل ہونے والی رقم صحت پر خرچ کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ یونیورسل ہیلتھ کوریج کو یقینی بنانے کے لیے پرائمری ہیلتھ کیئر سسٹم کو مضبوط کر رہے ہیں جبکہ اسلام آباد کو صحت کے حوالے سے ماڈل بنا رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں ڈینگی: کراچی سب سے زیادہ متاثرہ شہر

وزیر اعظم کے معاون خصوصی نے کہا کہ پسماندہ طبقے کو صحت انصاف کارڈ کے ذریعے علاج کی سہولیات فراہم کر رہے ہیں اور نیوٹریشن پر صوبوں کے ساتھ مل کر 500 ارب کا پروگرام لا رہے ہیں۔ وزیر اعظم کا احساس پروگرام غربت کے خاتمے کے لیے اہم کردار ادا کرے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز