پی ٹی آئی کور کمیٹی اجلاس، لاہور واقعے میں بروقت کارروائی نہ ہونے پر تحفظات

وزیراعظم کی مجسٹریٹ سسٹم بحال کرنے کی ہدایت

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی کور کمیٹی کا اجلاس ہوا جس کے دوران اراکین نے لاہور واقعے پر شدید افسوس کا اظہار کیا۔

ہم نیوز کے مطابق تین گھنٹے تک جاری رہنے والے اجلاس کے دوران اراکین نے بر وقت انتظامی کارروائی نہ ہونے پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایسا ہوجاتا تو جانی و مالی نقصان سے بچا جا سکتا تھا۔

عوام کو ریلیف دینے کے لئے بڑا فیصلہ

دوسری جانب وزیراعظم کا عوام کو ریلیف دینے کے لئے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے مجسریٹ سسٹم بحال کرنے کی ہدایت جاری کردی۔

عمران خان نے تاجر برادری کو ریلیف دینے کے لئے سابق وزیر اور پی ٹی آئی رہنما علیم خان کی تجاویز سے اتفاق کیا۔

اس موقع پر انہوں نے پارٹی کی تنظیم سازی کا عمل مکمل کرنے کی بھی ہدایت دی۔

گزشتہ روز وکلاء نے پی آئی سی پر حملہ کرکے وہاں توڑ پھوڑ کی اور متعدد افراد کو تشدد کا نشانہ بنایا جس کے باعث تین افراد جاں بحق ہوگئے۔

مزید پڑھیں: کل کے واقعہ پر قوم سے معافی مانگتے ہیں، صدر لاہور ہائی کورٹ بار کونسل

بعدازاں پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے کارروائی کی گئی اور متعدد وکلاء کو حراست میں بھی لیا گیا۔

وکلاء نے ناصرف لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ اسپتال اور باہر پارک کی گئی متعدد گاڑیوں کے شیشے بھی توڑ دیے جبکہ ایک پولیس موبائل کو بھی نذر آتش کردیا گیا۔

کیپیٹل سٹی پولیس افسر(سی سی پی او) لاہور ذوالفقارحمید کے مطابق پی آئی سی پر دھاوا بولنے والے وکلا کیخلاف مقدمہ درج کرکے گرفتاریاں شروع کر دی گئی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے متعدد وکلا کو گرفتار کیا ہے اور مزید تحقیقات جاری ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ تمام ذرائع سے فوٹیجز حاصل کی گئی ہیں جن سے ملزمان کی نشاندہی کی جا رہی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ گرفتار وکلا کو عدالت میں پیش کیا جائے گا اور ہنگامہ آرائی میں ملوث تمام افراد کے خلاف کارروائی ہوگی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز