پی آئی اے میں بے قاعدگیوں کی چھان بین شروع

پی آئی اے میں بے قاعدگیوں کی چھان بین شروع

فائل فوٹو

لاہور: قومی ایئر لائن میں اعلیٰ انتظامی سطح پر بے قاعدگیوں کا انکشاف ہونے کے بعد پاکستان آڈٹ اینڈ اکاؤنٹس چھان بین شروع کر دی ہے۔

ہم نیوز کو ملنے والی اطلاعات کے مطابق پی آئی اے میں چیف ایگزیکٹو آفیسر کی غیر قانونی تعیناتی، ڈیپوٹیشن پر آئے افسران کو اضافی الاؤنس اور خواتین عملے کو ہراساں کرنے کے متعلق تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پاکستان آڈٹ اینڈ اکاونٹس نے ایوی ایشن ڈویژن سے ائیرمارشل ارشد ملک کی بطور چیف ایگزیکٹو آفیسرتعیناتی سمیت دیگر ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

پاکستان آڈٹ رپورٹ کے مطابق ائیرفورس سے ڈیپوٹیشن پر آئے افسران کو غیر قانونی طور پر اضافی الاؤنس اور فوائد دئیے گئے اور پی آئی اے مدینہ اسٹیشن پر جعلی ڈگری کے باوجود ایک افسر کو تعینات کیا گیا۔

ایوی ایشن ڈویژن کے سامنے سات معاملات پر سوال اٹھایا ہے جب کہ خاتون اہلکار کو ہراساں کرنے کے متعلق بھی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

اطلاعات ہیں کہ پاکستان آڈٹ کل سے پی آئی اے ریکارڈ کا آڈٹ شروع کرے گا۔

ہم نیوز کے رابطہ کرنے پر ترجمان پی آئی اے نے بتایا کہ مذکورہ معاملے پر متعلقہ محکمے کے ساتھ بات ہو رہی ہے اور تمام ریکارڈ آڈٹ ٹیم کو فراہم کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز