حکومت نے 50 کروڑ تک کی کرپشن قانونی قرار دے دی، امجد شعیب

حکومت نے 50 کروڑ کرپشن کو قانونی قرار دے دیا، امجد شعیب

فائل فوٹو

اسلام آباد: حکومت کو نیب ترمیمی آرڈیننس 2019 منظور کرنے پر شدید تنقید کا سامنا ہے اور سنجیدہ حلقے اس کو این آر او دینے کے مترادف قرار دے رہے ہیں۔

جنرل ریٹائرڈ امجد شعیب نے کہا کہ اس آرڈیننس کے بعد حکومت کا بلاتفریق احتساب کا نعرہ کھوکھلا ہو جائے گا۔ انہوں نے حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سابقہ حکومتیں احتساب نہیں کرتی تھیں لیکن اس حکومت نے قانونی طور پر اسے ختم کردیا۔

تجزیہ کار کا کہنا تھا کہ عمران خان نے 50 کروڑ تک کی کرپشن کو قانونی بنایا دیا ہے کیوں کہ نیب اس سے زیادہ کی بد عنوانی پر کارروائی کرے گا۔

نجی ٹی وی پروگرام میں بات کرتے ہوئے امجد شعیب کا کہنا تھا کہ نیب کے اختیارات بھی محدود کر دیے گئے ہیں تو آپ کس طرح احتساب کریں گے۔

سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا تھا کہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے دور حکومت میں 2007 میں جو این آر او ہوا تھا، وہ نیب آرڈیننس میں ہی تبدیلیاں تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 2007 میں لائے گئے نیب آرڈیننس کو سپریم کورٹ نے 2010 میں ختم کر دیا تھا۔ ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی نے میثاق جمہوریت کے تحت ایک دوسرے کا احتساب نہیں کیا لیکن اس حکومت نے تو اس معاملے کو قانون تحفظ دے دیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز