آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس: رانا ثنااللہ کے اہلخانہ بھی شامل تفتیش

آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس: رانا ثنااللہ کے اہلخانہ بھی شامل تفتیش

فائل فوٹو

لاہور: قومی احتساب بیورو(نیب) نے رانا ثناء اللہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں ان کی اہلیہ، بیٹی اور داماد کو بھی شامل تفتیش کرلیا ہے۔

ذرائع کے مطابق نیب نے رانا ثنااللہ کی اہلیہ، داماد اور بیٹی کو بھی اثاثہ جات فارم جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ فیملی کے تینوں اراکین سے متعلق نیب رانا ثناءاللہ سے سوال وجواب بھی کیے تھے۔

ن لیگی رہنما سے شہریار کے ذرائع آمدن اور بیٹی کے نام پر اثاثوں کی تفصیل پوچھی گئی تھی۔ رانا ثنا اللہ نے بیٹی اور داماد سے متعلق کہا کہ سب ریکارڈ ہر موجود ہے۔

اطلاعات کے مطابق نیب نے رانا شہریار کے اثاثوں کی چھان بین بھی شروع کردی ہے کیوں کہ تفتیشی حکام کا الزام ہے کہ رانا ثناء اللہ نے اپنے اثاثے خاندان کے نام پر بنا رکھے ہیں۔

نیب کا الزام ہے کہ رانا شہریار سابق  وزیر قانون کے بینفشری ہیں اس لیے ان کے اثاثوں کی چھان بین کے متعلقہ اداروں سے ریکارڈ بھی مانگ لیا گیا ہے۔

خیال رہے نیب کا الزام ہے کہ رانا ثنا اللہ نے منصب کا ناجائز فائدہ اٹھاتے ہوئے فیصل آباد میں انڈر پاس کا نقشہ تبدیل کروایا اور من پسند افراد کو فائدہ پہنچایا تھا۔ نیب لاہور میں موجود لا چیمبر، ڈی ایچ اے کے دو گھروں، آٹھ کنال اراضی، رحمان گارڈن کی چار دکانوں، موجود سونے اور لینڈ کروزر کے بارے میں بھی چھان بین کر رہا ہے۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز