چوہدری شوگر ملز کیس: مریم نواز کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش

مریم نواز سے غیر متعلقہ سوال پوچھے جانے کا انکشاف

فائل فوٹو

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) نے چوہدری شوگر ملز کیس میں بھی مسلم لیگ نواز کی نائب صدر مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالنے کے لیے وزارت داخلہ کو خط لکھ دیا۔

ہم نیوز کے مطابق اس سے پہلے العزیزیہ اور ایون فیلڈ کیسز میں مریم نواز کا نام ای سی ایل میں شامل کیا گیا تھا۔

مریم نواز نے نام ای سی ایل سے نکالنے اور پاسپورٹ کی واپسی کے لیے لاہور ہائی کورٹ میں درخواست دائر کر رکھی ہے۔

نیب لاہور کی جانب سے وزارت داخلہ کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ چوہدری شوگر ملز کیس میں مریم نواز کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔

نیب نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ مریم نواز نے نواز شریف کے ساتھ مل کر منی لانڈرنگ کی۔

خط میں کہا گیا ہے کہ مریم نواز کے بیرون ملک جانے کا خدشہ ہے اور ان کا نام ای سی ایل میں شامل کیا جائے۔

اس سے پہلے العزیزیہ اسٹیل ملزاورایون فیلڈ کیسز میں بھی مریم نواز کا نام بطور ملزم نیب کی سفارش پرای سی ایل میں ڈالا گیا تھا۔

نواز شریف کا نام بھی ای سی ایل میں شامل تھا تاہم بیرون ملک علاج کے لیے وفاقی کابینہ نے ان کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی منظوری دی۔

مریم نواز نے والد کی تیمارداری کے لیے نام ای سی ایل سے نکالنے اور پاسپورٹ واپس کرنے کی درخواست لاہور ہائی کورٹ میں دائر کر رکھی ہے۔

ہائی کورٹ نے درخواست پرحکومت کو سات دن میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا تاہم کابینہ کی ذیلی کمیٹی کی سفارش پر وفاقی کابینہ نے نام ای سی ایل سے نہ نکالنے کی منظوری دی تھی۔

لاہور ہائی کورٹ کا دو رکنی بینچ مریم نواز کی درخواست کی سماعت 15 جنوری کو دوبارہ کرے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز