شام: جنگجوؤں کے قافلے پر فضائی حملے میں 8 ہلاک

دوحہ معاہدے کے بعد امریکہ کا طالبان پر فضائی حملہ

فوٹو: فائل

شام کے مشرقی علاقے میں فضائی حملے سے 8 جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں، حملے میں اسلحہ ترسیل کرنے والی گاڑیوں کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق فضائی حملے کے بعد بارودی مواد پھٹنے کی آوازیں بھی سنائی دیں۔

فضائی حملہ کس نے اس بارے میں مصدقہ اطلاع وصول نہیں ہوئی تاہم کہا جا رہا ہے کہ اس میں اسرائیل ملوث ہو سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : شام: جنگجوؤں کے قافلے پر فضائی حملے میں 8 ہلاک

معروف جریدے نیویارک ٹائمز میں شائع رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایک عراقی فوجی افسر کے مطابق زیادہ امکان یہی ہے کہ یہ حملہ اسرائیلی جنگی طیاروں نے کیا ہے۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے متعلق ہلاک ہونے والے عسکری اہلکاروں کا تعلق ایرانی حمایت یافتہ اعراقی ملیشیا حشد شعبی سے ہے۔

شام میں امریکی فوجی اتحادیوں کے سربراہ نے حالیہ حملے سے لا تعلقی کا اظہار کیا ہے۔ بین الاقوامی میڈیا کے مطابق شام اور عراق کی سرحد پر جن ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا وہ ماضی میں حشد شعبی کے جنگجوؤں کے زیر استعمال رہے ہیں۔

عراق اور شام نے بھی حملوں کے متعلق کوئی بیان جاری نہیں کیا۔ مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسلحہ لبیان میں جنگجو تنظیم حزب اللہ کو پہنچایا جا رہا تھا جس پر فضائی حملہ کیا گیا۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز