کوروناوائرس کا خطرہ، پاکستان کو تھرموگننز موصول

کورونا وائرس، امیر ترین شخص کو ایک دن میں 8 کھرب روپے کا نقصان

فوٹو: فائل

اسلام آباد: عالمی ادارہ صحت نے کوروناوائرس سے نمٹنے کیلئے پاکستان کو 100 تھرموگنز فراہم کی ہیں جن کی مدد سے داخلی اور خارجی راستوں پر مسافروں کی اسکریننگ کی جائے گی۔

تھرمل سکینرز کے ذریعے انسانی جسم کا درجہ حرارت چھوئے بغیر معلوم کیا جاسکے گا اور کورونا وائرس کے مشتبہ افراد کی نشاندہی ممکن ہو سکے گی۔

کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرات کے پیش نظر پاکستان کے قومی ادارہ صحت کی جانب سے تھرمل سکینرز کی فراہمی کی درخواست کی گئی تھی۔

عالمی ادارہ صحت کا پاکستان کیلئے تھرموگننز کا تحفہ

خیال رہے کہ کورونا وائرس سے اب تک 213 افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور عالمی ادارہ صحت نے اسے پوری دنیا کیلئے خطرہ قرار دے دیا ہے۔

پاکستان نے چین میں پھنسے اپنے شہریوں کو واپس لانے سے انکار کرتے ہوئے مؤقف اپنایا ہے کہ ایسا کرنا پورے خطے کو خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہے۔ حکومتی رکن سیمی ایزدی نے سینیٹ میں بتایا کہ چین میں کورونا وائرس کا بہتر علاج ہو سکتا ہے، اس لئے پاکستانیوں کو واپس آنے سے روکا۔

اپوزیشن پارٹیوں کی جانب سے حکومت کو شدید تنقید بناتے ہوئے مطالبہ کیا گیا ہے کہ چین میں پھنسے پاکستانیوں کو واپس لایا جائے۔ دوسرے ملک چارٹرڈ طیاروں کے ذریعے اپنے لوگوں کو چین سے نکال رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں