منشیات اسمگلنگ کیس: رانا ثناءاللہ کی درخواستیں مسترد

منشیات اسمگلنگ کیس: رانا ثناءاللہ کی ویڈیو فراہم کرنے کی درخواست مسترد

فائل فوٹو

لاہور: انسداد منشیات کی عدالت نے ویڈیو فراہم کرنے سمیت مسلم لیگ کے رہنما رانا ثنا اللہ کی تینوں درخواستیں مسترد کر دی ہیں۔

ن لیگی رہنما نے ویڈیو فراہم کرنے، روزانہ کی بنیاد پر کیس کی سماعت اور گاڑی واپس کرنے کی درخواستیں دائر کی تھی۔

عدالت نے رانا ثناءاللہ کے خلاف کیس کی سماعت 7 مارچ تک ملتوی کردی اور فرد جرم عائد کرنے کیلئے انہیں آئندہ سماعت پر طلب کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: منشیات اسمگلنگ کیس: راناثنا کی درخواست ضمانت مسترد

انسداد منشیات فورس نے(اے این ایف) نے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناءاللہ کو یکم جولائی کو منشیات اسمگلنگ کیس میں گرفتار کیا تھا۔ راناثنا کا موقف ہے کہ  ان کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کیا گیا جبکہ منشیات برآمدگی کے ثبوت بھی عدالت میں پیش نہیں کیے گئے۔

اے این ایف حکام کے مطابق رانا ثنا اللہ کی گاڑی سے منشیات کی بھاری مقدار برآمد ہوئی اور ان کے خلاف نارکوٹکس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ انسداد منشیات فورس کے ذرائع کے مطابق منشیات کے اسمگلر نے تفتیش میں ن لیگی رہنما کا نام لیا تھا۔

انسداد منشیات فورس کی جانب سے عدالت میں جمع کرائے گئے ضمنی چالان کے مطابق رانا ثنااللہ کے خلاف سی این ایس اے 1997ء کی دفعات 9 سی، 15 اور 17 کے تحت کیس درج کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز