فوک گلوکارہ صنم ماروی نے خلع لے لی

فوک گلوکارہ صنم ماروی نے خلع لے لی

معروف فوک گلوکارہ صنم ماروی کا شوہر حامد کے ساتھ ازدواجی سفر خلع کی ڈگری جاری ہونے کے بعد اختتام پذیر ہوگیا۔

فیملی کورٹ نے گلوکارہ ضنم ماری کی درخواست پر خلع کی ڈگری جاری کرنے کا حکم دیا۔

جج ثناء افضل واہلہ کی عدالت میں دوران سماعت صنم ماروی نے اپنا بیان ریکارڈ کرایا اور کہا کہ شوبز انڈسٹری میں شادیاں ٹوٹنے کی بڑی وجہ جھوٹ ہے، اپنے شوہر کے ساتھ مزید رہنا نہیں چاہتی۔

نامور گلوکارہ نے شوہر حامد علی سے علیحدگی کے لیے رواں ماہ کے آغاز میں درخواست دائر کی تھی اور موقف اختیار کیا تھا کہ حامد علی اور میری شادی 2009 میں اسلامی روایات کے مطابق ہوئی تھی، ہمارے تین بچے بھی ہیں شادی کے کچھ عرصے بعد شوہر کا رویہ بدل گیا۔

یہ بھی پڑھیں: صنم ماروی نے خلع کا دعویٰ دائر کر دیا

ان کا مزید کہنا تھا کہ شوہر بچوں کے سامنے گالیاں نکالتا اور مارتا پیٹتا ہے، اپنے بچوں کی خاطر شوہر کا ظلم و ستم برادشت کرتی رہی مگر اب صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا ہے۔

صنم ماروی نے استدعا کی ہے کہ شوہر کے ساتھ مزید گزار ممکن نہیں ہے لہذا عدالت خلع کی ڈگری جاری کرے۔

حامد خان نے تحریری جواب میں الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ صنم ماروی سے کبھی بدتمیزی کی اور نہ ہی کبھی گالی دی ہے ساتھ ہی ساتھ اہلیہ اور بچوں کا خرچ بھی باقاعدگی سے ادا کرتا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں: بشریٰ انصاری نے طلاق کے معاملے پر خاموشی توڑ دی

صنم ماروی فوک کلام کی جانی مانی گلوکارہ ہیں، ان کی شہرت کو چار چاند کوک اسٹوڈیو کے ’لگی بنا رین نہ جاگے کوئی‘ سے لگے۔

یاد رہے کہ 2019 میں بھی دونوں میاں بیوی کے درمیان بہت جھگڑے ہوئے تھے جن کا تذکرہ سوشل میڈیا پر ہوتا رہا۔

سندھ کے علاقے دادو کے ایک چھوٹے سے گاؤں میں جنم لینے والی صنم ماروی نے سات برس کی عمر میں ہی گلوگاری شروع کر دی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: سجل علی اور احد رضا میر کی شادی طے پا گئی؟

ان کے والد، فقیر غلام رسول، سندھ کے فوک گلوکار تھے تاہم ان کی زندگی بہت مشکلات میں گزری۔

خیال رہے کہ یہ صنم ماروی کی دوسری شادی تھی، ان کے پہلے شوہر آفتاب احمد کو 2009 میں کراچی میں قتل کر دیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز