شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت ملتوی

شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت آج

فائل فوٹو

اسلام آباد: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت ایک دن کیلئے ملتوی کر دی گئی ہے۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ اور جسٹس لبنی سلیم پرویز درخواستوں پر سماعت کی گے جس میں وزارت قانون اور نیب کو فریق بنایا گیا ہے۔

عدالت نے ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل نیب جہانزیب بھروانہ کی درخواست سماعت ایک دن کیلئے ملتوی کی۔ انہوں نے استدعا کی تھی کہ وہ اسلام آباد میں موجود نہیں ہوں گے لہذا آج سماعت تبدیل کر کے کوئی اور دن مقرر کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: شاہد خاقان عباسی کی درخواست جمع

شاہد خاقان عباسی نے ایل این جی کیس جبکہ احسن اقبال نے ناروال سپورٹس سٹی کیس درخواست ضمانت دائر کر رکھی ہے۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو نیب نے ایل این جی کیس میں جولائی 2019 کو گرفتار کیا تھا۔ ان پر الزام ہے کہ انہوں نے ایل این جی کی درآمد اور تقسیم کا 220 ارب روپے کا ٹھیکہ دیا جس میں وہ خود حصہ دار ہیں۔

نیب کراچی نے 19 دسمبر 2016 کوعلاقائی بورڈ کے اجلاس میں یہ کیس میرٹ پر بند کردیا تھا تاہم اس بار نیب راولپنڈی نے  دوبارہ تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نیب نے احسن اقبال کو گرفتار کر لیا

بعدازاں 3 دسمبر 2019 کو نیب نے احتساب عدالت میں ایل این جی ریفرنس دائر کیا تھا، جس میں سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزیر خزانہ مفتاح اسمٰعیل، پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او) کے سابق منیجنگ ڈائریکٹر شیخ عمران الحق اور آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کے سابق چیئرمین سعید احمد خان سمیت 10 ملزمان کو نامزد کیا گیا تھا۔

سابق وفاقی وزیر احسن اقبال پر الزام ہے کہ انہوں نے اسپورٹس سٹی تعمیر کرکے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا۔ قومی احتساب بیورو کا مؤقف ہے کہ اسپورٹس سٹی کی تعمیر میں پاکستان اسپورٹس بورڈ نے اختیارات سے تجاوز کرتے ہوئے خلاف قانون تین ارب روپے کا منصوبہ نارووال میں شروع کیا۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز