کورونا وائرس: حکومت سندھ نے عوام کے لیے ہدایت نامہ جاری کردیا

کورونا: سندھ میں لاک ڈاؤن 12/12 گھنٹوں میں تقسیم

کراچی: حکومت سندھ کے محکمہ صحت نے کورونا وائرس کے حوالے سے عوام الناس کے لیے ہدایت نامہ جاری کردیا ہے۔ محکمہ تعلیم آج شب تمام صوبائی تعلیمی اداروں، اساتذہ اور طلبہ کے لیے ان احتیاطی تدابیر کی فہرست جاری کرے گا جو کورونا وائرس سے بچاؤ میں معاون و مددگار ثابت ہوسکتی ہیں۔

کورونا وائرس کیا ہے اور اس سے کیسے بچیں؟

ہم نیوز کے مطابق صوبائی وزیرتعلیم سعید غنی نے محکمہ تعلیم کا اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا ہے جس میں صوبائی سیکریٹری تعلیم، سیکریٹری اسکولز، سیکریٹری کالجزاور ڈائریکٹر کالجز سمیت دیگر تمام متعلقہ حکام شرکت کریں گے۔

انتہائی ذمہ دار ذرائع کے مطابق شب آٹھ طلب کیا جانے والا اجلاس سندھ سیکریٹریٹ میں منعقد ہوگا۔ اجلاس میں اسکولوں و کالجوں کے لیے تمام ضروری احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے حوالے سے مشاورت کرکے انہیں حتمی شکل دی جائے گی جس کے بعد ان کا باضابطہ اعلان ہوگا۔

ہم نیوز کے مطابق حکومت سندھ کے محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ ہدایت نامہ کے تحت تمام پبلک،پرائیوٹ دفاتر،شاپنگ مالزاور عوامی مقامات پر سینیٹائزرز کا استعمال کیا جائے، ملازمین کو صحت کی سہولیات فراہم کی جائیں، ماسک،ایمرجنسی اور اوپی ڈی میں کام کرنےوالوں کوگلوزفراہم کیے جائیں، ایران اور چین سے آنےوالے مریضوں سے سفری معلومات حاصل کی جائیں، جن ممالک میں کورونا وائرس کے کیسز سامنے آئے ہیں وہاں سفرنہ کرنے کا مشورہ  دیا جائے، تمام عوامی مقامات پر آگاہی کے لیے پیغامات آویزاں کیے جائیں۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے ٹاسک فورس قائم کر دی

صوبائی محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ ہدایت نامے کے تحت تمام ڈسٹرکٹس کی ریپڈ رسپانس ٹیموں کوایران سے واپس آنےوالے زائرین کی فہرست دے دی گئی ہے جو انہیں فون کالز کرکے سفری معلومات حاصل کریں گی۔

ہم نیوز کے مطابق 24 گھنٹے کام کرنے والی ہیلپ لائن قائم کردی گئی ہے جس پر اطلاع دی جا سکتی ہے اور معلومات بھی حاصل کرنا ممکن ہوگا۔

صوبائی محکمہ صحت نے ہدایت کی ہے کہ ایران سے واپس آنے والے مسافروں میں علامتیں ظاہر ہونے کی صورت میں وہ اہلخانہ سےملنے سے اجتناب برتیں اور گھر میں ہی قیام کریں۔

ہم نیوز کے مطابق ہدایت نامے میں واضح طور پر کہا گیا ہے کہ ایران یا دیگر ممالک سے آنے والے مسافروں میں کورونا وائرس کی علامتیں ظاہر ہونے کی صورت میں فوری کنٹرول روم سے رابطہ کیا جائے اور مریض کو آئسولیشن وارڈ میں داخل کیا جائے۔

کورونا وائرس: سعودی عرب نے پاکستانی عمرہ زائرین پر پابندی لگا دی

حکومت سندھ نے ہدایت کی ہے کہ کنٹرول روم میں 24 گھنٹے ٹیکنیکل پرسنز کی موجودگی یقینی بنائی جائے اور بیرون ملک سے واپس آنے والے پاکستانیوں سے ڈپٹی کمشنرز کم از کم  14 دن تک رابطے میں رہنے کو یقینی بنائیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز