شیخ رشید نے بھٹو کو سلیکٹڈ اور عمران کو الیکٹد قرار دے دیا

لاک ڈاوَن کے بعد شہباز شریف کیلئے لاک اپ کا پروگرام ہے، شیخ رشید

فوٹو: فائل

لاہور: وفاقی وزیر برائے ریلوے شیخ رشید احمد نے سابق وزیراعظم ذوالفقار بھٹو کو سلیکٹڈ اور موجودہ وزیراعظم عمران خان کو الیکٹڈ  قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس بات پر مباحثہ کرنے کیلئے تیار ہوں۔

ریلوے ہیڈ کوارٹرز میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نہیں بلکہ ذوالفقار علی بھٹو سلیکٹڈ تھے کیونکہ وہ سابق آمر ایوب خان کو ڈیڈی کہتے تھے۔ سندھ والے تاریخ پڑھیں، ذولفقار بھٹو کو ان کی بیگم نصرت بھٹو نے بھٹو بنایا۔

وفاقی وزیر نے روہڑی حادثے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ریلوے ٹریک پر پھاٹک بنانا صوبائی حکومتوں کی ذمہ داری ہے۔  اس حوالے سے سندھ اور پنجاب کے وزرائے اعلیٰ سے کہوں گا کہ ریلوے ٹریک پر پھاٹک کےلیے فنڈز فراہم کریں۔

مزید پڑھیں: ٹرین مسافر کوچ سے ٹکرا گئی، 20 افراد ہلاک، 8 سے زائد زخمی

خیال رہے کہ گزشتہ روز روہڑی کے قریب پاکستان ایکسپریس ٹرین مسافر کوچ سے ٹکرا گئی تھی، جس کے نتیجے میں 20 افراد جاں بحق  اور 8 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

ذرائع کے مطابق پاکستان ایکسپریس کراچی سے راولپنڈی جارہی تھی۔ کندھرا پھاٹک کھلا ہونے کے دوران مسافر کوچ نے ریلوے کراسنگ عبور کرنے کی کوشش کی اور ٹرین کی زد میں آگئی۔

مزید پڑھیں: وزیر ریلوے شیخ رشید کے موجودہ دور میں 71 ٹرین حادثے ہوئے

ایک سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور پاکستان مسلم لیگ نواز کے صدر شہباز شریف اگر واپس آگئے تھے انہیں قرنطینہ میں رکھنا پڑے گا۔
انہوں نے کہا کہ مارچ میں شہبازشریف آ رہے ہیں، کورونا وائرس کی وجہ سے شہباز شریف کو چودہ دن کے لیے کئیر میں رکھنا پڑے گا

ایک سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ بھارت میں مسلمانوں کے ساتھ آگ اور خون کی ہولی کھیلی جا رہی ہے دنیا اس کا نوٹس لے۔

پیپلزپارٹی کا ردعمل

وفاقی وزیرریلوے کے بیان نے پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنماؤں نے سخت ردعمل دیا ہے، پارٹی ترجمان مولابخش چانڈیو کے مطابق ذوالفقار علی بھٹو پر انگلی اٹھانے سے پہلے شیخ رشید کو اپنے کردار کو دیکھنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو پاکستان میں مزاحمت کا جبکہ عمران خان شارٹ کٹ سیاست کی بدنما علامت ہیں۔

رہنما پیپلزپارٹی نے مزید کہا کہ محکمہ ریلوے کو تباہ کرنے والے شیخ رشید بدزبانی سے اپنی ناقص کارکردگی نہیں چھپا سکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ شیخ رشید سیاست دانوں کی کردارکشی بند کریں اور بتائیں کہ ریلوے کی یہ تباہی کیسے ہوئی؟

مولابخش چانڈیو نے کہا کہ آئے روز ٹرین حادثات میں انسانی جانیں ضائع ہورہی ہیں اور وزیر ریلوے کو سرخیوں میں جگہ بنانے کی فکر ہے۔

انہوں نے کہا کہ شیخ رشید عمران خان کے ترجمان بننے کے بجائے ان کو سامنے لائیں، عوام ان سے جھوٹے دعووں کا حساب لینا چاہتی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز