کوئٹہ میں کورونا وائرس سے 12 سالہ بچہ متاثر

کوئٹہ میں کورونا وائرس سے 12 سالہ بچہ متاثر

فائل فوٹو

کوئٹہ میں کرونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آگیا ہے جس کی وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے بھی تصدیق کر دی ہے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس سے بارہ سال کا بچہ متاثر ہوا ہے جس کو فاطمہ جناح اسپتال میں رکھا گیا ہے۔

ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی کا کہنا ہے کہ متاثرہ بچے کے اہل خانہ کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں تاہم بچے کو آئسولیشن روم منتقل کر دیا گیا ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ بچے کے خاندان کا تعلق بلوچستان سے نہیں ہے۔ سندھ میں وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد پندرہ ہوگئی ہے۔ چودہ مریض کراچی اور ایک حیدرآباد میں زیرعلاج ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کوروناوائرس سے ہلاکتوں کی تعداد4295 ہوگئی

کراچی میں دو مریضوں نے وائرس کو شکست دے دی ہے اور صحت یاب ہونے والے دوسرے مریض کو آج اسپتال سے ڈسچارج کر دیا جائے گا۔

وزیراعلی سندھ  مراد علی شاہ کو بتایا گیا کہ اب تک کراچی میں 14 اور حیدرآباد میں ایک شخص وائرس سے متاثر ہوا ہے۔

سندھ میں مجموعی طور پر 162 مشتبہ افراد کے ٹیسٹ ہوئے جن میں147 منفی اور 15 مثبت آئے ہیں۔ پہلے کے  جو6 کیسز تھے ان میں سے ایک اور  شخص ٹھیک ہوگیا اور ممکنہ طور پر اسے بدھ کو اسپتال سے فارغ کردیا جائے گا۔

کراچی کے اسپتالوں میں جو 14 متاثرہ افراد ہیں وہ صحت یاب ہورہے ہیں جب کہ مزید دو 2 سیمپل بھیجے گئے ہیں ان کے  نتائج آنا باقی ہیں۔

وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ صوبے میں تمام متاثرہ افراد باہر سے آئیں ہیں اور کوئی  مقامی کیس نہیں۔

ہم پہلے دن سے صورتحال کو کنٹرول کرنے کے لئے اقدمات اٹھا رہے ہیں جو کہ قابو میں ہے اور کسی کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔

وزیر صحت سندھ کی زیرصدارت  ہنگامی اجلاس میں ایئرپورٹ پر محکمہ صحت سندھ کی ذاتی ہیلپ ڈیسک جبکہ سرکاری اور نجی اسپتالوں میں فرنٹ لائن ڈیسک کے قیام کا فیصلہ کیا گیا۔

متاثرہ ممالک سے آنے والے افراد کو  چودہ روز کے سیلف کورنٹین میں رکھنے کی ایڈوائزری بھی جاری  کی جائے گی۔ کیسزمثبت آنے پر مریضوں کو گڈاپ اسپتال میں آئسولیشن میں رکھنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔

محکمہ صحت نے ائرپورٹ پر مسافروں کی اسکریننگ کے لئے نرسوں کو تعینات کرنے  کے احکامات جاری کردیئے۔60 نرسز کو  جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ کراچی  پر 3 شفٹوں میں تعینات  کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز