عائزہ خان کا عوام کو لباس سے میچنگ ماسک استعمال کرنے کا مشورہ

عائزہ خان کا عوام کو لباس سے میچنگ ماسک استعمال کرنے کا مشورہ

 اسلام آباد: پاکستان ڈرامہ انڈسٹری کی معروف اداکارہ عائزہ خان نے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے عوام کو سرجیکل ماسک کے بجائے لباس سے میچنگ ماسک استعمال کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

فوٹو اور ویڈیو شیئرنگ ایپلیکیشن (ایپ) انسٹاگرام پر عائزہ خان نے اپنی تصاویر شیئر کیں جس میں انہوں اپنے لباس سے میچنگ ماسک پہن رکھا تھا۔

ان تصاویر کے ذریعے اداکارہ عائزہ خان نے فیس ماسک کو بطور فیشن بھی متعارف کرا دیا ہے۔

ہم ٹی ویی کے ڈرامہ سیریل ’میرے مہرباں‘ سے شہرت حاصل کرنے والی اداکارہ عائزہ خان نے لکھا کہ اب تمام کپڑوں کے ساتھ میچنگ فیس ماسک پہننا ضروری ہے۔

ایک اور پوسٹ میں عائزہ خان نے عوام کو پیغام دیا کہ این 95 اور سرجیکل ماسک نہ خریدیں بلکہ کپڑے سے بنائے گئے ماسکس کا استعمال کریں۔

 

View this post on Instagram

 

With essential N95 and medical masks in short supply for medical workers, you should not be purchasing these types of masks (and if you have any that are unused, consider donating to a local hospital). As the medical workers, dealing with the patients need those masks more than us sitting at home or wanting to go to the grocery stores. Because of the panic people have stocked up on surgical mask creating a short supply for the medical workers who really need them. Due to this, the fashion industry stepped up to use their expertise into producing these masks. So around the world people are encourage to make their own cloth mask since the surgical masks are either too expensive or unavailable. In my recent posts, me and my team were trying to encourage my followers to not only make their own DIY mask but be creative with it. So my mask can have jewel or embroidery, it doesn’t matter as long as it serve the purpose and i am comfortable wearing it. So people should be little more open minded and act educated on the internet rather than trying to find the bad in every good. Stay safe.

A post shared by Ayeza Khan (@ayezakhan.ak) on

انہوں نے لکھا کہ سرجیکل اور این 95 ماسکس نہ صرف مہنگے ہیں بلکہ میڈیکل عملے کو ان کی زیادہ ضرورت ہے اسی لیے میں نے اور میری ٹیم نے اپنے فالوورز کی اس بات کے لیے حوصلہ افزائی کی ہے کہ وہ نا صرف اپنا ماسک خود بنائیں بلکہ اسے بنانے میں اپنی تخلیقی مہارت بھی سامنے لائیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز