امریکی صدر نے ہمیشہ کیلیے عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روکنے کی دھمکی دیدی

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہمیشہ کے لیے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی فنڈنگ روکنے کی دھمکی دے دی ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے ڈبلیو ایچ او  بہتر لائحہ عمل اختیار کرے۔

صدر ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈروس ادھانوم کو خط لکھا جس میں انہوں نے کہا ہے کہ اگر عالمی ادارہ صحت کورونا پر قابو پانے کے لیے اگلے تیس روز میں کوئی پختہ بہتری نہیں دکھاتا تو اس کی فنڈنگ ہمیشہ کے لیے روک دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: عالمی ادارہ صحت چین کی کٹھ پتلی ہے، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ

ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ٹیڈروس ادھانوم کو لکھے گئے خط میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ عالمی ادارہ صحت کے کورونا وائرس سے متعلق غلط اقدامات کی قیمت پوری دنیا کو بھگتنی پڑی ہے۔

امریکی صدر نے لکھا کہ عالمی ادارہ صحت یہ ثابت کرے کہ وہ چین کی جانب سے آزاد ہے۔

گزشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کو چین کی کٹھ پتلی قرار دیا تھا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے غیرتسلی بخش کام کیا۔

امریکی صدر نے مزید کہا کہ ڈبلیو ایچ او کی امداد کم کرنے پر غور کر رہے ہیں، عالمی ادارہ صحت کو فنڈنگ کے حوالے سے جلد فیصلہ کریں گے۔

خیال رہے کہ ایک ماہ قبل امریکہ نے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے فنڈز روک دیے تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ڈبلیو ایچ او پر چین نواز ہونے کا الزام لگایا اور کہا کہ ڈبلیو ایچ او نے کورونا وائرس سے متعلق درست معلومات فراہم نہیں کیں۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا: صدر ٹرمپ نے فرنٹ لائن ورکرز کے لیے دوا تجویز کردی

انہوں نے کہا کہ امریکہ ڈبلیو ایچ او کو سالانہ 4 سو سے 5 سو ملین ڈالر فراہم کرتا ہے جبکہ چین عالمی ادارہ صحت کو صرف 40 ملین ڈالر دے رہا ہے۔

امریکی صدر نے اپنی انتظامیہ کو حکم دیتے ہوئے کہا کہ ڈبلیو ایچ او کے فنڈز روک دیے جائیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز