کشمیر: ظلم کی انتہا ہوگئی، ایک دن میں 13 نوجوان شہید

کشمیر: ظلم کی انتہا ہوگئی، ایک دن میں 13 نوجوان شہید

سری نگر: مقبوضہ وادی کشمیر میں قابض بھارتی افواج نے بدترین ریاستی ظلم و بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک ہی دن میں 13 بے گناہ اور مظلوم کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر: حریت رہنما جنید صحرائی ساتھی سمیت شہید

ہم نیوز نے کشمیر میڈیا سروس کے حوالے سے بتایا ہے کہ قابض بھارتی افواج نے پونچھ ڈسٹرکٹ کے مندھر گاؤں سمیت اطراف کے دیگر علاقوں میں فوجی آپریشن کے دوران دس نوجوانوں کو شہید کیا ہے۔

قابض بھارتی افواج نے علاقے میں 28 مئی کو آپریشن شروع کیا تھا۔ اس ضمن میں بھارتی فوجی افسر نے ذرائع ابلاغ کے نمائندگان کو بتایا ہے کہ فوجی آپریشن تاحال جاری ہے جس کے دوران گھر گھر تلاشی لی جارہی ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق اس سے قبل وادی چنار میں قابض بھارتی افواج نے راجوری ڈسٹرکٹ کے علاقے نوشہرہ میں تین کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا۔

مودی حکومت کشمیر میں جنگی جرائم کا ارتکاب کررہی ہے، عمران خان

ہم نیوز کے مطابق جموں و کشمیر پیپلز فریڈم لیگ (جے کے پی ایف ایل) کے چیئرمین محمد فاروق رحمانی نے اپنے ایک بیان میں اے پی ایچ سی (اے جے کے) کے رہنما عبدالمجید میر کی رہائش گاہ پہ مارے جانے والے چھاپے کی شدید مذمت کی ہے۔

قابض فورسز نے کریم آباد پلوامہ میں واقع ان کی رہائش گاہ پر چھاپے کے دوران عبدالمجید میر کے بھائی عبدالکبیر میراوران کے دو صاحبزادوں کو بدترین جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا جس سے وہ زخمی ہو گئے۔

‘بھارت کے مقبوضہ کشمیرمیں اقدامات یو این قراردادوں کے منافی ہیں’

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فورسز جسمانی تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد عبدالکبیر کو نامعلوم مقام پر لے گئی ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز