مولانا فضل الرحمان نے لوٹی رقم سے کچھ بھی کورونا پر نہیں لگایا، فیاض الحسن

صوبائی وزیر نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان خیبر پختونخوا اور بلوچستان کے عوام کو سہانے خواب دکھا کے ووٹ لیتے رہے ہیں۔

لاہور: پنجاب کے وزیر اطلاعات و نشریات فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان نے قوم سے لوٹے اربوں روپوں میں سے ایک روپیہ بھی کورونا مخالف اقدامات پر نہیں لگایا۔

پنجاب کے وزیر اطلاعات و نشریات فیاض الحسن چوہان نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) اور قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاسوں میں حکومت کے ساتھ کچھ اور طے کر کے جاتے ہیں جبکہ بلاول بھٹو زرداری کے حضور جاتے ہی مراد علی شاہ کا رویہ تبدیل ہو جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مراد علی شاہ، آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو کی 18ویں ترمیم کے حق میں غزلیں سنتے عوام کے کان پک گئے، ان کے بقول 18ویں ترمیم کے بعد صوبے تعلیم، صحت، صنعت و تجارت کے فیصلوں میں خود مختار ہیں۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ پیپلز پارٹی رہنما اب کورونا حوالے سے کرپشن سامنے آنے پر وفاق کے پیچھے چھپنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کو کورونا وبا کے 4 مہینے بعد وفاق اور وزیر اعظم پر تنقید کرنے اور آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) بلانے کا خیال آیا۔

یہ بھی پڑھیں عوام کے لیے بُری خبر، آٹا مزید مہنگا ہو گیا

صوبائی وزیر نے کہا کہ جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان خیبر پختونخوا اور بلوچستان کے عوام کو سہانے خواب دکھا کے ووٹ لیتے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے قوم سے لوٹے اربوں روپوں میں سے ایک روپیہ بھی کورونا مخالف اقدامات پر نہیں لگایا۔ مولانا بتائیں کہ اپنی ذاتی جیب اور پارٹی کے ذریعے کورونا کے خلاف اب تک کیا حصہ ڈالا ؟

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز