تفریحی ٹیکس ختم کرنے پر سینما انڈسٹری کا خیرمقدم

تفریحی ٹیکس ختم کرنے پر سینما انڈسٹری کا خیرمقدم

لاہور: سینما انڈسٹری سے منسلک افراد نے نئے مالی سال 2020-21 کے بجٹ میں سینما گھروں سے تفریحی ٹیکس ختم کرنے کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔

نئے مالی سال میں پنجاب حکومت کی جانب سے انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی کو بیس سے کم کر کے پانچ فیصد کر دیا گیا ہے جب کہ  تیس جون دو ہزار اکیس سینما گھروں کو انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی سے مستثنیٰ بھی قرار دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: بلوچستان کا آئندہ مالی سال 2020-21 کیلیے بجٹ آج پیش کیا جائے گا

چیئرمین فلم ایگزیبٹرز ایسوسی ایشن زوریز لاشاری نے ڈیوٹی کم کرنے پر حکومت کا شکریہ ادا کیا اور ساتھ ہی ساتھ مطالبہ بھی کیا کہ ایک سال کے استثنٰی کی رعایت میں توسیع کی جائے۔

چیئرمین فلم ایگزیبٹرز ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت کا فصلہ اچھا ہے لیکن سینما مالکان کا بہت نقصان ہو چکا ہے ، کم از کم پانچ سال کا ٹیکس معاف کیا جانا چاہیے۔

چیئرمین سینما مینجمنٹ ایسوسی ایشن کا اس ضمن میں کہنا ہے کہ انڈسٹری زوال کا شکار تھی، حکومتی فیصلہ لائق تحسین ہے۔

چیئرمین سینما مینجمنٹ ایسوسی ایشن کا حکومتی فیصلے کے متعلق کہنا تھا کہ بہت اچھا فیصلہ کیا گیا ہے ، اس سے معاشی استحصال کا خاتمہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: مالی سال 21-2020: خیبر پختونخوا کا 923 ارب روپے کا ٹکیس فری بجٹ پیش

خیال رہے کہ لاک ڈاؤن کے باعث عید الفطر پر سینما گھر ویران رہے جب کہ عیدالاضحٰی پر بھی فلموں کی سینما گھروں میں نمائش کا امکان نہیں۔ ایسے حالات میں سنیما انڈسٹری کو بجٹ ریلیف تازہ ہوا کا جھونکا ثابت ہوا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز