لوگ اب وزیراعظم کے نوٹسز سے بھی ڈرنے لگے ہیں، سراج الحق

حکومت نے پانچ سال پورے کیے تو پھر یہی رہے گی عوام نہیں ہوں گے، سراج الحق

پشاور: جماعت اسلامی کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ وزیراعظم جس چیز کےمہنگا ہونے کا نوٹس لیتے ہیں وہ مارکیٹ سے غائب ہو جاتی ہے، لوگ اب وزیراعظم کے نوٹسز سے بھی ڈرنے لگے ہیں۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ اب مائنس یاپلس کی بجائےعوام کی مرضی کو نمبر ون قرار دینا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کےتمام دعوے الٹ ہو چکے ہیں۔ ملکی سیاسی منظرنامہ اضطرابی کیفیت کا شکار ہے۔

 حکومت فوری طور پر بجلی و گیس کے بلوں کی معافی کا اعلان کرے، سراج الحق

یاد رہے کہ چند ہفتوں قبل  اپنے ایک بیان میں سینیٹر سراج الحق نے کہا تھا کہ حکومت اعلانات، وعدوں اور تقریروں کے علاوہ کچھ نہیں کر رہی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت میں وزیروں اور مشیروں کی فوج ہے لیکن کام کچھ بھی نہیں کر رہی ہے۔ نالائق اور نااہل لوگوں کو مشیر بنایا ہوا ہے۔ حکومت کے لیے وارننگ ہے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکومت اب تک کوئی مشترکہ پلان نہیں دے سکی ہے ہم حکومت سے کہنا چاہتے ہیں کہ یہ وقت لڑائیوں کا نہیں ہے۔ حکومت و حزب اختلاف ایک پیج پر نیشنل ایکشن پلان بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ لاک ڈاوَن کی صورتحال آدھا تیتر اور آدھا بٹیر جیسی ہے۔ عوام تذبذب کا شکار ہیں جس سے مشکلات درپیش ہیں۔

یہ بھی پڑھیں کورونا وائرس: حکومتی ٹیم عدالت کومطئمن کرنےمیں ناکام، چیف جسٹس برہم

امیر جماعت اسلامی پاکستان نے کہا کہ ہم 36 لاکھ لوگوں کو ماسک، سینٹائزر اور طبی امداد فراہم کر چکے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز