پشاور کا تاریخی ورثہ مشکل میں

زمین میں دھنسے والی مسجد

فوٹو: ہم نیوز

مغلیہ دور کی تعمیرات منفرد طرز تعمیرکا انوکھا نمونہ ہیں اور پشاور کے نواحی علاقے اکبر پورہ میں اسی دور کی قدیم جامعہ مسجد اخون پنجوبابا آج بھی موجود ہے۔

ہم نیوز کے نمائندے محمد عثمان کے مطابق پانچ سو سال پرانی یہ  مسجد زمین میں دھنستی چلی جا رہی ہے اور اس کے مرکزی ہال میں پہنچنے کیلئے زمین کے نیچے جانا پڑتا ہے۔

مغل دور کی یہ شاہکار مسجد محکمہ آثار قدیمہ کی غفلت اور گردش زمانہ کے باعث خستہ حالی کا شکار ہے اور وقت گزرنے کے ساتھ حیرت انگیز طور پر زمین، میں دھنس رہی ہیں۔

ہم نیوز سے بات کرتے ہوئے امام مسجد کا کہنا تھا کہ مہراب پانچ فٹ زمین کے اندرجا چکا ہے۔

پشاورسے ملحقہ نوشہرہ کے اکبر پورہ میں واقع یہ مسجد مغل بادشاہ جلال الدین اکبر کے دورکاورثہ ہے جس کی تعمیر معروف بزرگ اخون پنجو بابا نے کروائی تھی۔

مسجد کا اندرونی حصہ آج بھی عہد مغلیہ کی شاندار تعمیرات کا پتہ دے رہی ہے۔۔ مقامی افراد عمارت کے دھنسنے کو معجزہ  قرار دیتے ہیں جب کہ محکمہ آثار قدیمہ بھی وجوہات کا پتہ لگانے سے قاصر ہے۔

حکومت کی عدم توجہی کے باعث علاقہ مکین خود وقتا فوقتا مسجد کی مرمت کرواتے رہتے ہیں تاہم مغلیہ دور کی تاریخ سموئے اس مسجد کی انفرادیت ختم ہونے کا خدشہ ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز