کراچی میں دودھ کی قیمت میں 10 روپے کا من مانا اضافہ

کراچی: شہر قائد میں ڈیری فارمرز نے دودھ کی قیمت میں 10 روپے فی کلو کا ازخود اضافہ کر دیا۔

کراچی کے شہریوں کے لیے ایک اور بُری خبر آ گئی۔ صدر ڈیری فامرز شاکر گجر نے کہا ہے کہ دودھ کی قیمت میں 330 روپیہ فی من اضافے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 11 جولائی سے دودھ 120 روپے فی کلو فروخت کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ کراچی میں دودھ کا سرکاری نرخ 94 روپے مقرر ہے لیکن شہر میں دودھ پہلے ہی فی لیٹر 100 سے 110 روپے میں فروخت کیا جا رہا ہے۔

مزید پڑھیں 2022 تک کھلے دودھ کی فروخت بند کردی جائے گی، چیئرمین پنجاب فوڈ اتھارٹی

گزشتہ سال ستمبر میں کراچی میں دودھ فروشوں کی من مانی کی وجہ سے دوھ ایک سو دس روپے کلو فروخت کرنا شروع کیا گیا تھا۔

کراچی میں دودھ 110 روپے لیٹر کے حساب سے فروخت ہونے پر شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا تھا تاہم شہری مہنگا دودھ خریدنے پر مجبور تھے۔

یہ بھی پڑھیں ملک کے بیشتر علاقوں میں بارش، موسم خوشگوار ہو گیا

شہر میں دودھ کی سرکاری قیمت 94 روپے فی لیٹر مقرر تھی لیکن ڈیری فارمرز نے ایکس فارم قیمت بڑھا کر دکانداروں کو دودھ مہنگا فروخت کرنا شروع کردیا تھا جس سے ریٹیل قیمت بڑھ گئی۔

شہریوں نے ہم نیوز کے توسط سے ضلعی اور صوبائی حکومت سے اپیل کی تھی کہ صورتحال کا فوری طور پر نوٹس لیا جائے اور دودھ فروشوں کو من مانی قیمت وصول کرنے سے روکا جائے تاہم حکومت کی جانب سے کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی تھی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز