آیا صوفیہ میں 24 جولائی کو پہلی نماز ادا کی جائےگی،ترک صدر

آیا صوفیہ میں 24 جولائی کوپہلی نماز ادا کی جائےگی،ترک صدر

انقرہ: ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان نے اعلان کیا ہے کہ تاریخی عمارت آیا صوفیہ میں 24 جولائی کوپہلی نمازادا کی جائےگی۔

ترکی: صدر کے دستخط، آیا صوفیہ میوزیم سے پھر مسجد میں تبدیل

ہم نیوز نے عالمی ذرائع ابلاغ کے حوالے سے بتایا ہے کہ ترکی کے صدر نے واضح کیا ہے کہ انہوں نے آیا صوفیہ کو مسجد میں تبدیل کرنے کے لیے اپنا خود مختار حق استعمال کیا۔

ترکی کے صدررجب طیب ایردوان نے ساتھ ہی خبردار کیا ہے کہ آیا صوفیہ کے اقدام پر تنقید ہماری آزادی پر حملہ تصور ہو گی۔

تقریباً پونے پانچ سو سال تک مسجد رہنے والی اس تاریخی عمارت کو 1930 کی دہائی میں میوزیم میں تبدیل کردیا گیا تھا۔

تاریخی عمارت آیا صوفیہ کو اقوام متحدہ کاادارہ یونیسکوعالمی ورثہ قراردے چکا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یونیسکو نے ترکی سے کہا تھا کہ وہ اس کی حیثیت تبدیل نہ کرے۔

ترکی: دلہنوں کیلئے دیدہ زیب اور منفرد ماسک تیار

عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق عدالتی فیصلے کے بعد جیسے ہی رجب طیب ایردوان نے صدارتی حکمنامے پر دستخط کیے تو لوگوں کی ایک بہت بڑی تعداد دیوانہ وارآیا صوفیہ کے باہر اکھٹی ہو گئی۔ اس موقع پر انتہائی پرجوش انداز میں نعرے بازی بھی کی گئی۔

خبر رساں ادارے کے مطابق استنبول میں آیا صوفیہ کے باہر ہزاروں کی تعداد میں موجود مرد و خواتین نے نماز کی ادائیگی بھی کی۔

نماز کی ادائیگی کے بعد ترک شہریوں نے ذرائع ابلاغ سے بات چیت میں کہا کہ پہلی نمازکی ادائیگی کے بعد فخرمحسوس کررہے ہیں۔ ایک اور شہری کا کہنا تھا کہ یہ کام بہت پہلے ہو جاناچاہیے تھا۔

کورونا: پاکستان اور ترکی کا مشترکہ اقدامات اٹھانے پر اتفاق

خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ نماز ادا کرنے والے ایک ترک شہری نے اپنے جذبات بیان کرتے ہوئے کہا کہ آیا صوفیہ کے سامنے نماز کی ادائیگی ایک حیرت انگیز احساس ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ ایسا محسوس ہوا کہ جیسے استنبول دوبارہ فتح ہوا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز