کورونا: ایمریٹس ایئرلائن کا 9ہزار ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ

کورونا وائرس کے پیش نظر امارات کی سرکاری ایئرلائن ایمریٹس  نے نو ہزار ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

مشرق وسطی کی ایئرلائن ایمریٹس کے صدر کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے نو ہزار ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کورونا وبا بحران سے پہلے ایمریٹس میں کام کرنے والوں کی تعداد 60 ہزار تھی۔

ایئرلائن ایمریٹس کے صدر نے مزید کہا کہ ایئرلائن پہلے ہی اپنے عملے کا دسواں حصہ ملازمت سے فارغ کر چکی ہے، اور مزید کچھ ملازمین کو جن کی تعداد 15 فیصد بنتی ہے ملازمت سے فارغ کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے امارات کی سرکاری ائیرلائن ایمریٹس نے پاکستان کیلئے پروازیں بحال کر دی تھیں۔

ایمریٹس ایئرلائن نے ابتدائی طور پرکراچی ، لاہور اور اسلام آباد کیلئے پروازنے چلانے کا اعلان کیا تھا۔ مسافروں میں کورونا وائرس کے کیسز سامنے آنے پر ایمریٹس نے پاکستان کے لیے پروازیں بند کر دی تھیں۔

امارات کی سرکاری ائیرلائن ایمریٹس نے 24 جون کو پاکستان سے اپنا فلائٹ آپریشن معطل کردیا تھا۔

ایمریٹس ایئرلائن نے کہا تھا کہ پاکستان سے یو اے ای جانے والے تمام مسافروں کو کورونا کا ٹیسٹ کرانا ہو گا۔ مسافروں کو کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ جمع کروانی ہوگی بصورت دیگر انہیں سفر کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

ایمریٹس ایئرلائن نے کہا تھا کہ ان پروازوں میں صرف ان لوگوں کو سفر کرنے کی اجازت دی جائے گی جو متحدہ عرب امارات کی حکومت کی طرف سے نافذ کیے داخلے اور اہلیت کے قوانین پر پورے اترتے ہوں۔

اکانومی کلاس کے مسافروں کے درمیان بھی فاصلہ ہوگا اور تھوڑے تھوڑے مسافر قطار میں پچھلی سیٹ سے اگلی سیٹ کی ترتیب کے مطابق سورا ہوں گے۔

ایمریٹس ایئرلائن نے کہا تھا کہ جہاز کا عملہ تمام مسافروں کو ماسک، دستانے، اینٹی بیکٹریل وائپس اور سینی ٹائزر پر مشتمل حفظان صحت کی کٹس فراہم کرے گا۔

امارات کی سرکاری ائیرلائن ایمریٹس نے کہا تھا کہ تمام مسافروں کیلئے ماسک اور دستانوں کا استعمال، ہاتھوں کو سینیٹائز کرنا اور درجہ حرارت کا معائنہ کروانا لازمی ہوگا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز