ماڈل نادیہ حسین کے ساتھ آن لائن فراڈ ہوگیا


پاکستان میں خرید و فروخت کے لئے انٹرنیٹ کا استعمال عام ہوگیا ہے۔ اگر آپ کے پاس کریڈِٹ کارڈ اور انٹرنیٹ کی سہولیات ہیں تو آپ گھر بیٹھے کپڑے،  کتابیں، بس اور ہوائی جہاز کے ٹکٹس وغیرہ خرید سکتے ہیں۔

انٹرنیٹ کے ذریعے خرید و فروخت کے اس عمل کے دوران آپ کسی شخص سے نہیں ملتے ہیں اور آپ کو اپنے کمپیوٹر پر پورا اعتماد ہوتا ہے۔

سوشل ميڈيا کے دورميں آسانی کے لئے آن لائن شاپنگ کوترجيح دی جاتی ہے لیکن اس میں دھوکے کا عنصر بھی شامل ہوتا ہے۔

پاکستان میں آن لائن شاپنگ میں اضافے کے بعد آن لائن فراڈ بھی بڑھ گئے ہیں۔ اداکارہ اور ماڈل نادیہ حسین کے ساتھ بھی فراڈ ہو گیا ہے۔

 

View this post on Instagram

 

. . . ONLINE PARCEL DELIVERY SCAM!!. . . Pls pls be vigilant of parcel seller and sender information BEFORE paying for your parcel!!!. . . I received this parcel today with my name hand written on the flyer and since I shop very regularly online it didn’t occur to me that this could be a SCAM and so I stupidly paid RS 4250 for an item I never ordered!!!!!. . . I AM NOT HOLDING THE COURIER COMPANY RESPONSIBLE!!!. . . These are ppl who are using courier company flyers and boxes and delivering absolute crap!!!. . . THIS HAS HAPPENED TO ME TODAY!!!. . . IT CAN HAPPEN TO YOU TOMORROW!!!!. . . I only wanted to warn all of you!!!. . . @callcourier @tcscouriers @dhlexpresspakistan @fedex

A post shared by Nadia Hussain Khan (@nadiahussain_khan) on

ہم نیوز کے پروگرام’صبح سے آگے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے اداکارہ نے کہا کہ انہیں ایسا پارسل ملا جس کا انہوں نے آرڈر ہی نہیں کیا  اور اس میں سے استعمال شدہ کمبل نکلا۔

نادیہ حسین نے انسٹاگرام پر ایک وڈیو بھی شیئر کی جس میں انہوں نے بتایا کہ ایک آن لائن جعلی پارسل ملا ہے جو کہ انہوں نے آرڈر نہیں کیا تھا اور انہوں نے بے دھیانی میں اس کے پیسے بھی ادا کر دیے۔

اداکارہ نے عوام سے اپیل کی کہ خدارا ایسا کوئی آن لائن پارسل جس پر بھیجنے والے یا فروخت والے کی تفصیل نہ لکھی گئی ہو ہر گز وصول نہ کریں اور اس کے لیے رقم بھی ادا نہ کریں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز