قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کا الزام، ڈائریکٹر شاہین ایئر گرفتار

کراچی: وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے قومی خزانے کو بھاری نقصان پہنچانے کے الزام میں شاہین ایئرانٹرنیشنل کے  ڈائریکٹر کو گرفتارکرلیا۔

ذرائع کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی شکایت پر شاہین ایئرانٹرنیشنل کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ مقدمہ شاہین ایئر کے چیف ایگزکٹیو آفیسر اور ڈائریکٹر سمیت 15 افراد کے خلاف درج کیاگیا تھا۔

ایف آئی اے زرائع کے مطابق  قومی خزانے کو نقصان پہنچانےکے الزام میں تفتیش کے لیے ڈائریکٹرشاہین ایئرکو باقاعدہ گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی شکایت پر ایف آئی اے کارپوریٹ کرائم سرکل نے مقدمہ کردیا تھا۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کی شکایت کے مطابق شاہین ایئرانٹرنیشنل نے مارچ 2018 سے لے کر اب تک ادائیگیاں نہیں کی ہیں۔ معاوضوں اورمحصولات کی عدم ادائیگی سے قومی خزانے کو 1اعشاریہ 4 ارب روپے کا نقصان ہوا۔

ذرائع کے مطابق ایف آئی اے نے دوملزمان سے پوچھ گچھ کے لیے کینیڈین حکام سے بھی رابطہ کیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ رائل کینیڈین ماونٹڈ پولیس نے دوملزمان سے 500 کینیڈین ڈالربرآمد کیے تھے۔  خیال رہے کہ سال 2018 میں  شاہین ائیر لائن کے ملکی اور بین الاقوامی فلائٹس آپریشنز ایک ارب  40 کروڑ روپے واجبات کی عدم ادائیگی کی وجہ سے بند کردیے گئے تھے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز