فی تولہ سونے کی قیمت ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی

کراچی کے صرافہ بازار میں سونے کی فی تولہ قیمت ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔

آل پاکستان صرافہ بازار ایسوسی ایشن کے مطابق مارکیٹ میں سونےکی فی تولہ قیمت 400 روپےاضافےکے بعد ایک لاکھ 9 ہزار300 روپے ہو گئی ہے جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت 343 روپے اضافےکے بعد 93 ہزار707 روپے تک پہنچ چکی ہے۔

دوسری جانب پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں کاروبار کے دوران آج ملا جُلا رجحان موجود رہا اور کاروبار کا اختتام معمولی مندی کے رجحان پر ہوا۔

کاروباری ہفتے کے تیسرے روز بدھ کو اسٹاک مارکیٹ کا آغاز مثبت زون میں ہوا۔ کاروبار کا آغاز کے ایس ای 100 انڈیکس میں 36 ہزار 745 پوائنٹس  پر ہوا اور ابتدا میں ہی انڈیکس 125 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور 100 انڈیکس 36 ہزار 870 پوائنٹس کی سطح پر ٹریڈ کر رہا تھا۔

اسٹاک مارکیٹ کو کاروبار کے دوران منفی زون میں بھی ٹریڈ کرتے دیکھا گیا اور انڈیکس 79 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 36 ہزار 664 تک گر گیا تھا۔

بعد ازاں مارکیٹ میں 100 انڈیکس میں 66 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ کاروبار کا اختتام 36,679.03 کی سطح پر ہوا ہے۔

آج  کاروبار کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس میں 227,614,034حصص کا کاروبار ہوا جس کی مالیت پاکستانی روپوں میں 11,413,310,325 بنتی ہے۔

گزشتہ روز منگل کو اسٹاک مارکیٹ کا اختتام 126 پوائنٹس اضافے کے ساتھ 36 ہزار 745 کی سطح پر ہوا تھا۔

گزشتہ ہفتے معاشی تھنک ٹینک کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کورونا نے پاکستان سمیت عالمی معیشت پر منفی اثرات مرتب کیے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت کی پالیسی وبا سے عوام کا تحفظ اور اقتصادی سرگرمیوں کے درمیان توازن ہے۔ معاشرے کے انتہائی پسماندہ طبقات کو امداد کی فراہمی اولین ترجیح ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ غربت کے خاتمے کے لیے حکومت کا احساس پروگرام کلیدی اہمیت کا حامل ہے۔ انتہائی مستحق افراد کی مدد کے لیے احساس پروگرام میں توسیع کی ضرورت ہے۔

انہوں کا کہنا تھا کہ تعمیراتی شعبے میں راعات کا مقصد روزگار کے مواقع پیدا کرنا ہے۔ حکومت غریب عوام کو سستی رہائش فراہم کرنا چاہتے ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز