چمن بارڈر: پیدل چلنے والوں کے لیے کھول دیا گیا

چمن بارڈر: پیدل چلنے والوں کے لیے کھول دیا گیا

کابل: افغانستان میں پاکستان کے خصوصی نمائندے محمد صادق نے کہا ہے کہ چمن بارڈر کو پیدل سفر کرنے والے افراد کے لیے کھول دیا گیا ہے۔

چمن بارڈر: مظاہرین اور سیکیورٹی فورسز میں تصادم، 3 جاں بحق، 20 زخمی

ہم نیوز کے مطابق محمد صادق نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ چمن بارڈر پیدل سفر کرنے والوں کے لیے کھولا گیا تو 13 ہزار 500 افراد نے دونوں ممالک کے درمیان آمد و رفت کی ہے۔

چمن میں پاک افغان بارڈرباب دوستی پر مظاہرین اور سیکیورٹی فورسز میں چند روز قبل ہونے والے تصاد م کے نتیجے میں تین افراد جاں بحق اور 20 زخمی ہو گئے تھے۔

’مفادپرست، اسمگلنگ میں ملوث عناصر نے چمن بارڈر پر لوگوں کو اکسایا‘

لیوز حکام کے مطابق مظاہرین نے قرنطینہ سینٹرکوجلادیا تھا اور ایک ہزارکے قریب خیمے جل گئے تھے۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا تھا کہ مفادپرست اور اسمگلنگ میں ملوث عناصر نے چمن بارڈر پر لوگوں کو اکسایا تھا۔

بارڈر بند کرنے کا مقصد دہشت گردوں کو روکنا تھا، ضیا اللہ لانگو

بلوچستان کے وزیر داخلہ میر ضیا اللہ لانگو نے چمن بارڈر پرپیش آنے والے ناخوشگوارواقعہ پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا تھا کہ بارڈربند کرنے کا مقصد دہشت گردوں کی آمد و رفت کو روکنا تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز