مولانا فضل الرحمان نے اپوزیشن الائنس کا اجلاس طلب کر لیا

اسلام آباد: جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اپوزیشن الائنس کا اجلاس طلب کر لیا۔

نمائندہ ہم نیوز کے مطابق اپوزیشن الائنس کا اجلاس 27 اگست کو مولانا فضل الرحمان کی رہائشگاہ پر ہو گا جس میں چھوٹی اپوزیشن کی جماعتیں شرکت کریں گی۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے آج صبح مولانا فضل الرحمان سے ان کی رہائشگاہ پر ملاقات کی جس میں مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر اتفاق کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق ہونے والی ملاقات میں آل پارٹیز کانفرنس کے انعقاد سمیت دیگر تمام متعلقہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان ہونے والی ملاقات میں اپوزیشن کو متحد کرنے کے امور پر غور کیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کے مرکزی صدر میاں شہباز شریف اور امیر جے یو آئی (ف) مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات میں اس مسئلے پر بھی غور کیا گیا کہ اپوزیشن جماعتوں کے درمیان پائے جانے والے فاصلوں کو کیسے کم  کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: وفاقی وزیر کیجانب سے واجب القتل کا لفظ استعمال کرنا مناسب نہیں، فواد چوہدری

ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہبازشریف کا کہنا تھا کہ تمام جماعتوں کو اکٹھا کرکے مشاورت کریں گے۔ ہم سب مل کر بیٹھ کراے پی سی بلائیں گے۔

شہبازشریف نے کہا کہ اے پی سی ہوگی اور ضرور ہوگی، اس کے متعلق رہبر کمیٹی کے اجلاس میں مشاورت کریں گے۔

مولانافضل الرحمان نے کہا کہ باہمی مشاور ت سے مستقبل کا لائحہ عمل طے کریں گے۔ موجود ہ صورتحال کاتقاضہ ہے کہ ہم باہمی تحفظات کودور کریں۔

انہوں نے بتایا کہ  حاصل بزنجوکےانتقال کےباعث چھوٹی جماعتوں کااجلاس مؤخر کر دیا گیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت کے خلاف تحریک کے لیے اتفاق رائے ہے۔ اپوزیشن مشترکہ اور مستحکم حکمت عملی بنائے گی۔ اپوزیشن کی تقسیم ملک کے مفاد میں نہیں۔ مشترکہ اور مستحکم حکمت عملی ضرورت ہے۔حکومت کے خلاف تحریک پر ہماری یکسوئی ہے۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز