راوی ریور فرنٹ منصوبے سے 12 لاکھ لوگوں کو روزگار میسر ہوگا، عثمان بزدار

شیخوپورہ: وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ راوی ریورفرنٹ اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ ایک اہم منصوبہ ہے، جس سے ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگا۔ منصوبے سے 12 لاکھ لوگوں کو روزگار میسر ہوگا۔

شیخوپورہ میں تقرین سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ راوی ریورفرنٹ اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے تحت  7 لاکھ درخت لگائے جائیں گے۔ منصوبے سے لاہور شہر کی فضائی آلودگی میں کمی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ  دریائے راوی گندا نالہ بنتا جا رہا ہے۔ راوی ریورفرنٹ اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے تحت 12 زونز بنیں گے۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت عملی اقدامات پریقین رکھتی ہے۔ راوی ریور منصوبہ ہمارے عملی اقدامات کی مثال ہے۔ منصوبے کے لیے راوی ریور اتھارٹی بھی بنائی گئی ہے۔

خیال رہے کہ یکم ستمبر کو وزیراعظم عمران خان نے راوی ریور فرنٹ اربن ڈویلپمنٹ منصوبے کی مانیٹرنگ روزانہ کی بنیاد پرکرنے اور انتظامی رکاوٹ دور کرنے کی ہدایت کی تھی۔

لاہور میں راوی ریورفرنٹ اربن ڈویلپمنٹ منصوبہ سےمتعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا تھا کہ لاہورکے رہائشیوں اور سمندر پار پاکستانیوں کیلئے یہ منصوبہ ایک شاہکارہو گا۔ منصوبےپرپیشرفت کےحوالےسے مسلسل آگاہ رکھاجائے۔

وزیراعظم نے کہا تھا کہ حکومتی اقدامات کی بدولت تعمیرات کے شعبے کو حوصلہ افزا فروغ حاصل ہوا۔ اجلاس کے دوران وزیراعظم نےبیرونی سرمایہ کارکمپنیوں کی منصوبےمیں دلچسپی کو سراہا تھا۔

مزید پڑھیں: سی ڈی اے اور ہاؤسنگ اتھارٹی کی حاصل کردہ اراضی پر تعمیرات پر 2 ماہ کیلئے پابندی

اجلاس کو چیئرمین راوی ریورفرنٹ اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کی انفراسٹرکچر سے متعلق تنظیمی امور پر بریفنگ دی گئی تھی۔

اس سے قبل 18 جولائی کو وزیراعظم عمران خان نے دریائے راوی کے کنارے نیا شہر آباد کرنے والے راوی ریور فرنٹ اربن ڈویلپمنٹ منصوبے پر کام جلد شروع کرنے کی ہدایت کردی تھی۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ منصوبہ پنجاب کی معیشت اور لاہور شہر کی رہائشی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے اہم ہے۔ منصوبے سے لوگوں کو نوکریاں دینے میں مدد ملے گی۔

وزیراعظم نے کہا تھا کہ پراجیکٹ سے لاہور کے رہائشیوں کیلئے پانی کی کمی سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ حکومت ترقیاتی منصوبوں سے متعلق ہر رکاوٹ ترجیحی بنیادوں پر دور کرنے کیلئے پرعزم ہے۔

انہوں نے ہدایت کی تھی کہ پراجیکٹ کی تکمیل کے دوران ماحولیاتی نظام پر منفی اثرات مرتب نہ ہوں۔ واٹر کنزرویشن کا خاص خیال رکھا جائے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز