کورونا کیس سامنے آنے پر متعلقہ اسکول فوری بند کر دیں گے، وزیر تعلیم پنجاب

اسلام آباد: وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نےکہا ہے کہ جس اسکول میں کورونا کیس سامنے آیا اسے فوری طور پر بند کر دیا جائے گا۔

ہم نیوز کے مارننگ شو ’صبح سے آگے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں ایک لاکھ 20 ہزار اسکولز ہیں، بعض اسکولوں میں ایس او پیز پر عمل درآمد ہو رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب میں سرکاری اور نجی اسکولز 15 ستمبر سے پہلے نہیں کھولنے دیں گے، مراد راس

میزبان اویس منگل والا اور شفا یوسفزئی سے گفتگو کے دوران ان کا کہنا تھا کہ اسکولز کے کورونا سے متاثرہ عملہ یا اساتذہ کو حاضری سے گریز کرنا چاہیے، عرصہ بعد تعلیمی ادارے کھلے ہیں، ہم تمام اسکولوں کو بند نہیں کریں گے۔

مراد راس نے کہا کہ پنجاب کے بعض سرکاری تعلیمی اداروں میں حاضری اچھی تھی، اساتذہ اور اسکول انتظامیہ تعلیمی اداروں کو کھولنے کے لیے اصرار کررہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ اب وقت ہے کہ اساتذہ اور انتظامیہ ذمہ داری کامظاہرہ کریں۔

وزیر تعلیم پنجاب کا کہنا تھا کہ ایلیٹ اسکولز طلبہ کے والدین بچوں کو بھیجنے پر رضامند نہیں ہیں، اکثر والدین کو اسکولز میں کورونا سے بچاؤ کے انتظامات پر اطمینان نہیں۔

پروگرام میں موجود دوسرے مہمان وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا تھا کہ بعض  نجی اسکولز میں  ایس او پیز پر عمل درآمد نہیں ہورہا۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز تشویشنا ک ہیں۔ اسکولز  کے اساتذہ میں کورونا ٹیسٹ کے نتائج  مثبت  آئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: محکمہ اسکولز میں کچھ بلیک میلر عناصر موجود ہیں، مراد راس

سعید غنی نے کہا کہ گزشتہ روز کچھ نجی اسکولز کا دورہ کیا وہاں پر بچے حاضر تھے، اسکولز انتظامیہ اور اساتذہ کوذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیے۔

صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ 5 سے 10 سال کے بچوں کے والدین کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز