سندھ: دوسرے مرحلے میں اسکول کھولنے کا فیصلہ مؤخر


کراچی:  وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ مڈل کلاسز کا آغاز 28ستمبر سے ہوگا۔

ہم نیوز سے خصوصی بات کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز کی صورتحال دیکھ کر یہ فیصلہ کیا گیا کہ مڈل کلاسز کا آغاز23ستمبر سے نہیں کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے ایک ہفتے کے لیے آٹھویں اور ساتویں کلاسز شروع نہ کرنے کافیصلہ کیا تھا۔ سعید غنی کا کہنا تھا کہ سندھ میں جو تعلیمی ادارے کھولے گئے ہیں ان میں کورونا ایس او پیز پر عمل در آمد نہیں ہو رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے لیے بچوں کی صحت پہلی ترجیح ہے۔ تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلہ مؤخر کیا گیا ہے۔

آل پاکستان پرائیویٹ ا سکولز فیڈریشن نے سندھ حکومت کے اس فیصلے کی مذمت کی ہے۔ اے پی پی ایس ایف کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت بھی این سی او سی فیصلے کااحترام کرے۔ سندھ کے سرکاری تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز صوبائی حکومت کی غفلت وناکامی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:دوسرے مرحلے میں تعلیمی ادارے کل سے کھلیں گے

صدرآل پاکستان پرائیویٹ ا سکولز فیڈریشن کاشف مرزا کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت کا فیصلہ تعلیم دشمنی پر مبنی ہے۔ کاشف مرزا کا کہنا تھا کہ سندھ نے وفاق کیساتھ اختلاف کی وجہ سے دوسرے مرحلے میں اسکول کھولنے کا فیصلہ مؤخر کیا۔

وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے کہا ہے کورونا ابھی ختم  نہیں ہوا کیسز تو سامنے آئیں گے لیکن سندھ کا مڈل کلاسز شروع نہ کرنے کا  فیصلہ سمجھ سے باہر ہے۔

خیال رہے کہ یشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے دوسرے مرحلے میں تعلیمی ادارے کھولنے کی اجازت دے دی ہے۔ پنجاب، خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں چھٹی سے آٹھویں جماعت کے طلبہ کی کلاسز کل سے شروع ہوں گی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز