چین کی سندھ کے سیلاب متاثرین کی کیلئے اڑھائی کروڑ روپے کی امداد

کراچی: چینی حکومت نے سندھ میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریوں سے متاثرین  ہونے والے افراد کی امداد کے لیے اڑھائی کروڑ روپے فراہم کر دیے۔

قونصل جنرل کی سربراہی میں چینی وفد نے  وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ سے ملاقات کی اور امدادی رقم کا چیک پیش کیا۔ وفد نے  بارشوں سے صوبے میں تباہی پر افسوس کا اظہار کیا۔ چینی قونصل جنرل نے یقین دہانی کرائی کہ چینی حکومت متاثرہ ہاریوں کی بھی مدد کرے گی۔

چینی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ چین نے ہمیشہ سندھ حکومت کی مدد کی ہے۔ سال 2010 اور 2011 کے سیلاب میں بھی چین نے متاثرین کی بحالی میں تعاون کیا تھا۔

مزید پڑھیں: کراچی نے غیر معمولی بارشوں کا سامنا کیا،گورنر سندھ

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وزیراعظم عمران خان سے سیلاب متاثرین کے لیے مدد کی اپیل کی تھی۔

وزیراعظم عمران خان کے نام لکھے گئے خط میں مراد علی شاہ نے کہا تھا کہ سندھ میں بارشوں نے بڑی اور ناقابل تلاقی تباہی مچائی ہے۔ کراچی کا دورہ کرنے پر وزیراعظم عمران خان کا مشکور ہوں۔

مراد علی شاہ نے کہا تھا کہ بارشوں میں جاں بحق افراد کے لیے فی کس 5 لاکھ روپے امداد دی جائے زخمیوں کو 2لاکھ روپے فی کس امداد دی جائے۔

مراد علی شاہ نے خط میں کہا تھا کہ کراچی میں بارشوں کے دوران انفراسٹریکچر کو نقصان پہنچا۔ کراچی میں انفراسٹریکچر کے نقصانات کا تخمینہ 5 ارب روپے ہے۔ سندھ کے دیگر اضلاع میں انفراسٹریکچر کو بھی 5 ارب روپے کا نقصان پہنچا۔

وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت متاثرہ افراد کو ایک لاکھ روپے کی مالی امداد فراہم کرے۔آبپاشی نظام کی بہتری کےلیے منصوبہ پر 43 ارب روپے لاگت آئے گی۔وفاقی حکومت منصوبے کی تکمیل میں مدد کرے۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا تھا کہ موسمیاتی تبدیلیوں طوفانی بارشوں سےنہری نظام بری طرح متاثر ہوا ہے۔ عالمی ماہرین نے سندھ میں دریاوں اور آبپاشی نظام کی بحالی کے لیے جامع پلان دیا ہے۔سندھ حکومت تنہا آبپاشی نظام کی بحالی کا کام نہیں کرسکتی۔

مراد علی شاہ نے خط میں مزید کہا تھا کہ وفاق دریاوَں اور نہروں کے نظام کی بہتری کے لیے 43 ارب روپے فراہم کرے۔ مالیاتی مشکلات کے سبب آبپاشی نظام پر خطیر رقم خرچ نہیں کرسکتے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز