کراچی: دو مبینہ ٹارگٹ کلرز گرفتار

کراچی: شہر قائد کراچی میں پولیس نے پولیس اہلکاروں سمیت متعدد افراد کے قتل میں ملوث دو مبینہ ٹارگٹ کلرز کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

پولیس کے مطابق ملزمان کراچی میں محکمہ تعلیم کے دو افسران کے قتل میں بھی مطلوب ہیں۔

کاؤنٹر ٹیررازم پولیس کے مطابق دونوں ٹارگٹ کلرز کو پاک کالونی کے علاقے سے گرفتار کیا گیا۔ ملزمان کا تعلق متحدہ قومی مومنٹ لندن سے ہے۔

ذرائع کے مطابق منور اقبال اور وسیم عرف کمانڈو کو پہلے بھی پانچ مرتبہ گرفتار کیا جاچکا ہے۔ ٹارگٹ کلرز کے خلاف تھانہ سی ٹی ڈی میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ ملزمان کے قبضے سے دو پستول اور  گولیاں بھی برآمد ہوئی ہیں۔

دوسری جانب کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں مسلح کار سواروں سے  پولیس مقابلے میں ایڈیشنل ایس ایچ او شہید ہو گیا ہے۔ شہید ہونے والے  پولیس اہلکار کی شناخت سب انسپکٹر رحیم خان کے نام سے ہوئی ہے۔

مزید پڑھیں: کراچی میں ایک اور مبینہ پولیس مقابلہ مشکوک ہو گیا

سی سی ٹی وی فوٹیج میں سفید رنگ کی کار میں سوار ملزمان کی جانب سے پولیس اہلکاروں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلہ کو دیکھا جا سکتا ہے۔

ایک مقام پر  کار میں سوار ملزمان اور پولیس اہلکاروں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ فائرنگ کے تبادلہ میں پولیس سب انسپکٹر ہوگیا۔ شہید اہلکار   تھانہ گلستان جوہر میں ایڈیشنل ایس ایچ او تعینات تھا۔

سی سی ٹی وی فوٹیج میں پولیس سے فائرنگ کے تبادلہ کے بعد ملزمان کو سفید رنگ کی گاڑی میں فرار ہوتے دیکھا جاسکتا ہے۔ پولیس مقابلے میں ملزمان زخمی حالت میں فرار ہوگئے۔

ایس ایس پی  شرقی  ساجد سدوزئی کے مطابق  واقعہ کے فوری بعد پولیس کی  مزید نفری طلب کرلی گئی ہے.

پولیس کے مطابق ملزمان زخمی حالت میں فرار ہوگئے اور ملزمان نے مختلف جگہوں سے تین گاڑیاں چھینی تھیں۔ فرار ملزمان نے صفورا گوٹھ سے آکر گلستان جوہر می تیسری گاڑی چھینی تھی۔ فرار ہوتے ہوئے ملزموں نے نیلے رنگ کی تیسری گاڑی کو سعودآباد کے علاقے میں چھوڑا اور کر فرار ہو گئے۔

پولیس کے مطابق ملزمان کی گرفتاری کے لیے مخلتف علاقوں میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔

خیال رہے کہ رواں ماہ دو جبکہ رواں سال اب تک  گیارہ پولیس افسر اور اہلکار  شہید ہوچکے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز