پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کی تجاویز مسترد 

بجلی اور پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا فیصلہ آج ہوگا

فائل فوٹو

اسلام آباد: حکومت نے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کی تجاویز مسترد کر دی ہیں۔

حکومت کی جانب سے آئندہ 15 روز کے لیے پیٹرول کی قیمت میں کوئی ردبدل نہیں کیا گیا، مٹی کے تیل اور ڈیزل کی قیمتوں میں بھی کوئی ردبدل نہیں کیا گیا۔

حکومت نے ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے 40 پیسے کمی کی ہے۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے یکم اکتوبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی تجویز دی تھی۔

اوگرا کی جانب سے حکومت کو بھجوائی گئی تجاویز میں کہا گیا تھا کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 سے 4 فیصد فی لٹر کمی کی جائے۔

اوگرا نے سفارش کی ہے کہ پٹرولیم لیوی کی شرح بڑھا کر قیمتیں برقرار رکھی جاسکتی ہیں۔ اوگرا نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں دو روپے تک فی لٹرکمی کی تجویز دی۔

یہ بھی پڑھیں:نیپرا: بجلی صارفین پر165 ارب کا اضافی بوجھ ڈالنےکی منظوری

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل کا فیصلہ وزیراعظم کی مشاورت سے کیا گیا اور وزارت خزانہ نئی قیمتوں سے متعلق حتمی اعلان آج کیا۔

بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں نے ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی اٹھانوے پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی درخواست کی ہے جس پر نیپرا آج سماعت کرے گا۔

گزشتہ ہفتے نیپرا نے بجلی کی قیمت ایک روپے 62 پیسے مہنگی کرنے کی منظوری دی تھی جس سے صارفین پر165 ارب کا اضافی بوجھ پڑا۔

نیپرا نے24ستمبر کو مالی سال 2020 کی دوسری سہ ماہی کے لیے 73 ارب اور تیسری سہ ماہی کا 91 ارب 80 کروڑ کا اضافی بوجھ  ڈالنے کی منظوری دی تھی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز