حکومت کا نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن قائم کرنے کا فیصلہ

گیس و بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا ذمہ دار کون؟ مراد سعید نے بتادیا

فائل فوٹو

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

پرائم منسٹر (پی ایم) ڈلیوری یونٹ نے نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن پر کام کا آغاز کر دیا ہے، نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن کے لیے الگ نظام تشکیل دیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر اعظم نے اعلیٰ سطح کی نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی سیاحت تشکیل دے دی

اس اقدام سے کسی بھی ہنگامی صورتحال میں عوام کو ایک مخصوص ایمرجنسی ہیلپ لائن نمبر میسر ہو سکے گا۔

وزیر اعظم عمران خان نے نیشنل ہیلپ لائن نمبر کے قیام کو2 ماہ میں مکمل کرنے کی ہدایت جاری کی ہے۔

وزیر اعظم آفس کا اس ضمن میں کہنا ہے کہ ملک کے تمام ایمرجنسی ہیلپ لائن نمبرز کو نئے نظام سے منسلک کیا جائے گا اور اس کے ذریعےکسی بھی ناگہانی صورت میں شہری کی فوری مدد ممکن ہو گی۔

اس ضمن میں وزیر اعظم آفس نے بتایا کہ نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن نمبر ٹول فری ہو گا اور اس نئے سسٹم میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائے گا۔

وزیر اعظم آفس نے یہ بھی بتایا کہ نیشنل ایمرجنسی ہیلپ لائن کے قیام کے لیے ملک کی تمام موبائل کمپنیوں سے معاونت حاصل کی جائے گی اور نظام کو موثر اور مستحکم بنانے کے لیے قانون سازی بھی کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: پشاور: باچا خان انٹر نیشنل ایئر پورٹ پر جدید سسٹم نصب

وزیر اعظم آفس کے مطابق قانون سازی کے لیے صوبوں سے بھی مشاورت ہو گی۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز