پاکستان پیٹرولیم کے پانچ افسران کے خلاف ریفرنس دائر


کراچی: قومی احتساب بیورو(نیب) نے پاکستان پیٹرولیم کے پانچ افسران کے خلاف ریفرنس دائر کردیا ہے۔

افسران پر غیر ملکی باشندے کے ساتھ مل کر قومی خزانے کو20 ارب سے زائد کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔ احتساب عدالت نے ریفرنس سماعت کے لئے منظور کرلیا ہے۔

عدالت نے مفرور ملزم غیرملکی باشندے پاویل میرک کے وارنٹ گرفتاری بھی جاری کردیئے ہیں۔  ریفرنس میں نامزد دیگر ملزمان میں سابق ایم ڈی عاصم مرتضی خان، جنرل مینجر پی پی ایل بزنس ڈولپمنٹ عبدالواحد، چیف اکنامسٹ پی پی ایل راحت حسین، سعد اللہ اور معین رضا خان بھی شامل ہیں۔

نیب ریفرنس چئیرمین پاکستان پیٹرولیم لمیٹیڈ کی شکایت پر دائر کیا گیا ہے۔ نیب ریفرنس کے مطابق پی پی ایل افسراں نے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا ہے۔ پی پی ایل افسراں نے غیر ملکی کمپنی سے اضافی ریٹ پر معاہدہ کیا۔ ریفرنس میں نامزد مرکزی ملزم عاصم مرتضی خان ڈاکٹر عاصم و دیگر کے خلاف 17 ارب روپے کی کرپشن ریفرنس میں بطور نیب کا گواہ نامزد کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز