ننکانہ صاحب میں خاتون سے مبینہ زیادتی، 2 مرکزی ملزمان گرفتار

ننکانہ صاحب: پولیس نے وسطی پنجاب کے شہر ننکانہ صاحب  میں جڑنوالہ روڑ پر خاتوں سے مبینہ زیادتی کرے والے دو مرکزی ملزمان گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

پولیس کے مطابق دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے جاری ہیں۔ ملزمان کو جلد گرفتار کر کے ڈین این اے سیمپل لیبارٹری میں بھیجیےجائیں گے۔

پولیس ذرائع کے مطابق گزشتہ رات چھ افراد نے جڑانوالہ روڑ پر تھانہ منگٹانوالہ کی حدود میں چھ افراد نے خاتون کو لفٹ دینے کے بہانے بٹھا کر زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

مزید پڑھیں: موٹروے پر خاتون سے زیادتی کاواقعہ شرمناک ہے، چیف جسٹس

ذرائع کے مطابق ‏بس خراب ہونے پر خاتون دوسری سواری کے انتظار میں کھڑی تھی، ‏کار میں سوار افراد نے خاتون کو لفٹ دینے کے بہانے بٹھا لیا۔ ‏6 ملزمان نے خاتون کو نشہ آورخوراک دے کر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

اس سے قبل وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ننکانہ صاحب میں خاتون سے اجتماعی زیادتی کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ‏آئی جی پنجاب انعام غنی اور ریجنل پولیس افیسر سے ننکانہ صاحب واقعے کی رپورٹ طلب کرلی تھی۔

وزیراعلیٰ نے ‏آئی جی پنجاب انعام غنی کو ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے قانونی کارروائی کا حکم دے دیا تھا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز