شاعر انقلاب حبیب جالب کی آخری آرام گاہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار

شاعر انقلاب حبیب جالب کی آخری آرام گاہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار

شاعر انقلاب حبیب جالب کی آخری آرام گاہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو گئی۔ حکومتی نوٹس کے باوجود کوئی کام نہیں ہوا۔

شاعر انقلاب حبیب جالب کو خاموش ہونے پر بھلا دیا گیا عظیم شاعر کی آخری آرام کی کوئی مرمت یا صفائی کروانے والا بھی نہیں ہے۔

ظالموں کے خلاف صدائے حق بلند کرنے اور معاشرتی ناانصافیوں کو اپنی نظموں کا موضوع بنانے والے حبیب جالب سے یہ زمانہ انصاف نہ کر پایا۔ حبیب جالب کی آخری آرام گاہ پر کہیں مٹی کے ڈھیر اور کہیں کچرا بکھرا ہوا ہے۔

لاہور کے علاقے سبزہ زار میں واقع شہر خموشاں میں انقلابی شاعر کی قبر کی خستہ حالی انتظامیہ کی لاپرواہی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

حبیب جالب کے بچے اکثر اپنے والد کی قبر پر دعا کرنے آتے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ اپنی استطاعت کے مطابق قبر کی مرمت کراتے رہتے ہیں لیکن انتظامیہ کی جانب سے کسی قسم کا کوئی تعاون نہیں کیا جاتا۔ حبیب جالب صرف ہمارے نہیں بلکہ پورے ملک کے ہیرو تھے ان کی آخری آرام گاہ کو بہتر ہونا چاہیے۔

شاعر عوام کی قبر کی شکستہ حالی پر سابق حکومت نے نوٹس تو لیا تھا لیکن عملی طور پر کوئی کام نہ ہوا۔

یہ بھی پڑھیں: پشاور: اداکار دلیپ کمار کا آبائی گھر سرکاری تحویل میں لینے کا فیصلہ

انقلابی شاعر نے اپنی زندگی عوام کو نئی فکر اور سوچ دینے میں گزاری لیکن آج ان کی آخری آرام گاہ اپنوں کی ہی غفلت کا شکوہ کرتی نظر آتی ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز