حالیہ بیان میں قومی سلامتی سے متعلق تاریخ مسخ کرنے کی کوشش کی گئی، ڈی جی آئی ایس پی آر

اسلام آباد: پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے سربراہ میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ کل ایک ایسا بیان دیا گیا جس میں قومی سلامتی سے منسلک معاملات کی تاریخ مسخ کرنے کی کوشش کی گئی۔

جی ایچ کیو میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کی  پریس کانفرنس کا ون پوائنٹ ایجنڈاہے۔ کل ایک ایسا بیان دیا گیا جس میں حقائق کو مسخ کیا گیا، پلوامہ واقعہ کے بعد بھارت کو منہ کی کھانا پڑی۔

پاک فوج کے ترجمان نے کہا کہ پاکستان کی فتح کو نہ صرف دُنیا میں تسلیم کیا گیا بلکہ  خود ہندوستان کی قیادت نے اس شکست کا جواز رافیل جہازوں کی عدم دستیابی  پر ڈال دیا۔ پاکستان نے ذمہ دار ریاست کے طور پر امن کو ایک اور موقع دیتے ہوئے ابھی نندن کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا۔  پاکستان کا فیصلہ ذمہ دارنہ اور جنیوا کنونشن کے تحت تھا، جس کو پوری دُنیا نے سراہا۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ تاریخ کی درستگی کیلئے واضح کرنا چاہتا ہوں کہ یہ فیصلہ تمام جنگی آپشنز کو مدِ نظر رکھتے ہوئے بالادستی سے کیا گیا۔ پاکستان کی قیادت اور افواجِ پاکستان ہر طرح کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پوری طرح تیار ہے۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ دشمن نے رات کی تاریکی میں بدحواسی میں پہاڑوں پر بم گرائے۔ اللہ کی مدد سے ہمیں دشمن پر واضح فتح نصیب ہوئی۔ پاکستان کی فتح کو پوری دنیا نے تسلیم کیا۔

مزید پڑھیں:  ابھی نندن کے معاملے پر قومی اسمبلی میں گرما گرمی

ڈی جی آئی ایس پی آربابرافتخار نے کہا کہ  پاکستان نے امن کوموقع دیتے ہوئے ابھی نندن کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا۔ پاکستان نے اعلانیہ طور پر دن کی روشنی میں دشمن کو جواب دیا۔ پاکستان کی قیادت اور افواج ہر صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار تھی۔

انہوں نے کہا کہ منفی بیانیے سے دشمن فائدہ اٹھارہا ہے ہمیں ذمہ داری سے آگے بڑھنا ہوگا۔ ہم اندرونی اور بیرونی خطرات سے آگاہ ہیں، ہر چیلنج سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں۔ ہرقسم کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیاجائے گا۔ مسلح افواج ایک منظم ادارہ ہے، افواج کی قیادت اور رینک کو جدا نہیں کیاجاسکتا ہے۔

میجرجنرل بابرافتخار نے کہا کہ افواج پاکستان کے چوکنا اور بروقت رسپانس نے دُشمن کے عزائم کو ناکام بنا دیا۔ دشمن کے جہاز جو بارود پاکستان کےعوام پر گرانے آئے تھے ،بد حواسی میں پہاڑوں پرگرائے گئے۔

انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان نے قوم کےعزم کے مطابق دشمن کوسبق سکھانے کا فیصلہ کیا۔ اس فیصلے میں پاکستان کی تمام سول ملٹری قیادت یکجا تھی۔ پاکستان نے اعلانیہ ہندوستان کو دن کی روشنی میں جواب دیا۔

پریس کانفرنس کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھا کہ حالیہ بیانات پر افواج پاکستان میں شدید غصہ پایا جاتا ہے۔ ہم پاکستان کی خاطر سیاسی بیانات پر خاموش ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے صحافیوں سے غیررسمی گفتگو میں  کہا کہ محمد زبیر کی ملاقاتوں پر جو میں نے کہا وہ سچ ہے۔ فوج خود کو سیاسی معاملات سے دور رکھے ہوئے ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز