ناسا نے مشتری پہ پریوں کی حرکات و سکنات ریکارڈ کر لیں

ناسا نے مشتری پہ پریوں کی حرکات و سکنات ریکارڈ کر لیں

واشنگٹن: امریکہ کے خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا نے دعویٰ کیا ہے کہ اس کے روبوٹک خلائی مشن نے مشتری سیارے پر غیر مرئی مخلوقات کی حرکات و سکنات ریکارڈ کی ہیں۔

کورونا کے دماغ پر اثرات سے متعلق نئی تحقیق سامنے آگئی 

ہم نیوز نے امریکی نشریاتی ادارے سی این این کے حوالے سے بتایا ہے کہ روبوٹک خلائی مشن جونو نے جو کچھ دیکھا ہے وہ مافوق الفطرت یا یہ کہ پری نما مخلوق ہے جو بڑے طوفانوں سے 60 میل کی اونچائی پر دکھائی دیتی ہے۔

 

اس حوالے سے سائنسی زبان میں کہا جاتا ہے کہ دکھائی دینے والی روشنی دراصل کائنات میں وہ روشن مراکز ہیں جو آسمانی بجلی سے توانائی حاصل کرتے ہیں اور پھر متحرک ہوتے ہیں۔

ناسا نے چاند پر پانی کی موجودگی کی تصدیق کر دی

سی این این کی رپورٹ کے مطابق آسمان کو اپنی روشنی سے منور کردینے والے مراکز کی یہ حرکت صرف چند ملی سیکنڈز کے لیے ہی دکھائی دیتی ہے۔

ناسا کو ملی ایک اور تاریخی کامیابی

ناسا کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ روشنی کے یہ مراکز کسی جیلی فش کی صورت میں دکھائی دیتے ہیں اور دلچسپ امر ہے کہ انہیں بیک وقت آسمان اور زمین کی جانب بڑھتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز