سندھ: کورونا سے مزید 13 مریض جاں بحق، ایک ہزار سے زائد متاثر

کراچی: سندھ میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس  سے مزید 13 مریض جاں بحق ہوگئے۔ 

وزیراعلیٰ  سندھ مراد علی شاہ کی جانب سے جاری تازہ اعداد و شمار کے مطابق صوبے میں کورونا سے جاں بحق افراد کی مجموعی تعداد 2829 ہوگئی ہے۔

مراد علی شاہ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران کورونا وائرس کے ایک ہزار 102 نئے کیسز سامنے آئے۔ سندھ میں کورونا کے کیسز کی تعداد ایک لاکھ 63 ہزار 329 ہو گئی ہے۔

وزیراعلیٰ  سندھ مراد علی شاہ کی جانب سے جاری تازہ اعداد و شمار کے مطابق کراچی میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران کورونا وائرس کے 719 کیسز رپورٹ ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ میں کورونا کے 510 مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے جب کہ 61 مریض وینٹی لیٹر پر ہیں۔

خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے کورونا وائرس کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کا عندیہ دے دیا ہے۔

اپنے ٹوئٹر پیغام میں انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم جلسے کر کے عوام کی زندگی خطرے میں ڈال رہی ہے۔ کیسز ایسے ہی بڑھتے گئے تو لاک ڈاؤن کرنے پر مجبور ہو جائیں گے اور نتائج کی ذمہ دارپی ڈی ایم پر ہوگی۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر تشویشناک ہے۔ گزشتہ 15 دنوں میں وینٹی لیٹرز پر کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ پشاور اور ملتان میں وینٹی لیٹرز پر مریضوں کی تعداد میں 200 فیصد تک اضافہ ہوا۔ کراچی 148، لاہور 114، اسلام آباد میں 65 فیصد مریض وینٹی لیٹر پر گئے ہیں۔

وزیراعظم نے بتایا کہ اسلام آباد اورملتان میں وینٹی لیٹر کا استعمال 70فیصد ہے۔ پشاور اور ملتان میں وینٹی لیٹرز پر مریضوں کی تعداد میں 200 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت کا کورونا کیسز بڑھنے پر اپوزیشن کیخلاف مقدمات کا اعلان

اسد عمر نے کہا سیاسی رہنماؤں کیلئے یہ پیغام ہے کہ کورونا خطرہ نہیں ہے زندگیوں کو خطرہ ہے۔ انتہائی ضروری ہے کے قوم یکجا ہو کر پھر سے احتیاطی تدابیر پر عمل کرے۔ تاکہ صحت کی بھی حفاظت کریں اور لوگوں کے روزگار کو بھی بچا سکیں۔

وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ کوروناخطرات میں عوام کی زندگیوں کوداؤ پرلگانا سیاسی سفاکی اور ظلم ہے۔ کارکنوں کی زندگیوں سےکھیلنا مفاد پرست سیاسی ٹولےکی ذہنیت بےنقاب کرتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ملکی اداروں کو بدنام اور معیشت تباہ کرنیوالے اب عوام کی صحت کے درپے ہیں۔ غیرذمہ دارانہ رویےسےعوامی صحت اورروزگاردونوں متاثرکرنا چاہتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز