روس: فوجیوں کو ویکسین دینے کی مہم شروع کردی

روس: فوجیوں کو ویکسین دینے کی مہم شروع کردی

ماسکو: روس نے اپنے جوانوں کو عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین دینے کی مہم شروع کردی ہے۔

کورونا سے بچاؤ کی ویکسین کو محفوظ رکھنا مسئلہ ہو گا؟

ہم نیوز نے روسی ذرائع ابلاغ کے حوالے سے بتایا ہے کہ وزیر دفاع سرگئی شوئیگو نے اعلان کیا ہے کہ روس کے صدر ولادی میر پیوٹن کی ہدایت پر تقریباً پانچ لاکھ فوجیوں کو کورونا سے بچاؤ کی ویکسین دی جائے گی۔

عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق  روس کے وزیر دفاع کا کہنا ہے کہ اب تک 2500 سے زائد فوجیوں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔

روس کے وزیر دفاع سرگئی شوئیگو نے عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس امید کا اظہارکیا ہے کہ 2020 کے اختتام تک تقریباً 80 ہزار فوجیوں کو ویکسین کی خوراک دی جا چکی ہو گی۔

کورونا ویکسین کی قیمت کیا ہو گی؟

روسی ذرائع ابلاغ  کے مطابق روس کی تیار کردہ ویکسین اسپٹنک فائیو 95 فیصد زیادہ مؤثر ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق دیگر بین الاقوامی ویکسین بنانے والی کمپنیوں نے اپنے ٹیسٹوں کے جو نتائج بتائے ہیں ان کے مطابق ویکسین 90 فیصد اور کچھ زیادہ مؤثر ثابت ہوئی ہے۔

روسی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسپٹنک فائیو تیار کرنے والوں کا دعویٰ ہے کہ ان کی ویکسین کو دیگرتیار ہونے والی ویکسینوں کے مقابلے میں محفوظ رکھنا زیادہ آسان ہے۔

روس: کورونا ویکسین’سپوتنک فائیو‘کی پروڈکشن میں اضافہ کردیا

عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق اس وقت تک کی معلومات کے تحت روس کی تیار کردہ ویکسین کی قیمت تقریباً دس ڈالرز کے مساوی ہو گی۔

روس کی جانب سے تیار کی جانے والی کورونا ویکسین اسپٹنک فائیو کو اگست 2020 میں رجسٹرڈ کیا گیا تھا۔

ضرورت مند ممالک کو کورونا ویکسین فراہم کرنے کیلئےتیار ہیں، روس

ذرائع ابلاغ کے مطابق اس وقت روس کی جانب سے تیار کی جانے والی ویکسین کے ٹرائل کا تیسرا مرحلہ جاری ہے جس میں 40 ہزار رضا کار حصہ لے رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز