اسٹیل ملز : برطرف ملازمین کا احتجاج، نیشنل ہائی وے کی بندش

کراچی: پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین نے برطرفیوں کے خلاف احتجاج شروع کردیا ہے۔ احتجاج کے باعث ٹریفک کی روانی بری طرح متاثر ہو رہی ہے۔

پاکستان اسٹیل ملز کے 4 ہزار سے زائد ملازمین کو نکال دیا گیا

ہم نیوز کے مطابق پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین نے برطرفیوں کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے نیشنل ہائی وے بلاک کردی ہے۔

نیشنل ہائی وے کی بندش کے سبب دونوں اطراف گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ییں۔ نیشنل ہائی وے کو مظاہرین سے خالی کرانے کے لیے ضلعی انتظامیہ نے پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی ہے۔

ہم نیوز کے مطابق احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے اور نیشنل ہائی وے پر ٹریفک کی روانی یقینی بنانے کے لیے پولیس کی بھری نفری اسٹیل ملز کے اطراف پہنچ گئی ہے۔

پی آئی اے ملازمین کی تعداد آدھی، اسٹیل ملز کو لیز کرنے جارہے ہیں، عشرت حسین

ترجمان پاکستان اسٹیل ملز نے گزشتہ روز بتایا تھا کہ نکالے جانے والے ملازمین کی فہرست تیار کر لی گئی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ گروپ 2-3-4 کے ملازمین کو فارغ کیا گیا ہے جن میں ٹیچرز، ڈرائیورز، فائرمین، آپریٹرز، صحت عامہ کے افراد اور سیکیورٹی اسٹاف شامل ہیں۔

ترجمان پاکستان اسٹیل ملز نے بتایا تھا کہ نکالے جانے والے ملازمین میں ڈی سی ایز، ایس ای ڈی جی ایم، اور مینیجرز بھی شامل ہیں۔

پی آئی اے، اسٹیل مل اور ریلوے سے ملازمین کو نکالنا غیرآئینی ہے، رضا ربانی

ہم نیوز نے پاکستان اسٹیل ملز کے ترجمان کے حوالے سے بتایا تھا کہ تمام ملازمین کو ملازمتوں سے فارغ کیے جانے کے نوٹسز بذریعہ ڈاک بھیج دیے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز