جوبائیڈن کی کامیابی تسلیم نہیں کرتا، الیکشن فراڈ تھے: ٹرمپ

جوبائیڈن کی کامیابی تسلیم نہیں کرتا، الیکشن فراڈ تھے: ٹرمپ

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے واضح طور پر کہا ہے کہ وہ جوبائیڈن کی صدارتی انتخابات میں کامیابی کو تسلیم نہیں کریں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے انتقال اقتدار کی منظوری دے دی

ہم نیوز کے مطابق مؤقر امریکی نشریاتی ادارے فوکس نیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نہ وہ جوبائیڈن کی کامیابی کو تسلیم کریں گے اور نہ ہی ووٹنگ کے عمل میں فراڈ کے حوالے سے اپنے نظریے سے دستبردار ہوں گے۔

صدارتی انتخابات کے بعد اپنے پہلے خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ میرا ذہن تبدیل نہیں کیا جا سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ آئندہ چھ ماہ میں بھی ان کی سوچ اس حوالے سے تبدیل نہیں ہو گی۔

تقریباً 45 منٹ کے انٹرویو میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے اور انتخابات مکمل طور پر فراڈ تھے۔

امریکی صدر ٹرمپ نے جوبائیڈن کی کامیابی کو دھاندلی کا نتیجہ قرار دیدیا

امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس بہت سے شواہد موجود ہیں اور ہم انہیں جج حضرات کے سامنے پیش کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کو ہمیں سننا چاہیے اور کوئی چیز وہاں تک بھی جانی چاہیے لیکن اگر ایسا نہیں ہوتا ہے تو پھر سپریم کورٹ کا کیا فائدہ ہے؟

فوکس کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے امریکی صدر نے شکایتی انداز میں کہا کہ جسٹس ڈیپارٹمنٹ اور ایف بی آئی ان کی مدد نہیں کررہے ہیں۔

ٹرمپ گزشتہ ہفتے ایران پر حملے کا ارادہ رکھتے تھے،نیو یارک ٹائمز

امریکی صدر سے پوچھے جانے والے ایک اور سوال کے جواب میں ٹرمپ نے کہا کہ وہ اس حوالے سے اپنی قانونی کاوش ختم کرنے کی کوئی تاریخ بھی نہیں دیں گے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ وہ اس ضمن میں پر امید ہیں اور کامیابی کا راستہ بھی دیکھتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز