کورونا ریپڈ ٹیسٹنگ کے نتائج مصدقہ نہیں، ڈاکٹریاسمین راشد

نیا کورونا پاکستان پہنچ گیا،3مریضوں میں تصدیق

فائل فوٹو

لاہور: وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ کوروناوائرس کی ریپڈ ٹیسٹنگ سے تشخیص جلدہو جاتی ہے لیکن نتائج مصدقہ نہیں ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے وفاق کو اینٹی جین ٹیسٹنگ سے متعلق تحفظات سے آگاہ کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرریپڈ ٹیسٹنگ میں نتائج مثبت آ بھی جائیں تو دوبارہ پی سی آر کرانا ضروری ہوتا ہے۔

ترجمان محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر نے بتایا کہ وفاق کو معاملہ پر اپنے تحفظات سے آگاہ کر چکے ہیں۔صوبائی محکمہ صحت کے مطابق پنجاب کے علاوہ کسی بھی صوبہ میں ریپڈ ٹیسٹنگ کا آغاز نہیں کیا گیا۔ وفاق نے تمام صوبوں کو 20نومبر سے اینٹی جین ٹیسٹنگ شروع کرنے کی ہدایت دی تھی۔

پنجاب میں ایک لاکھ 19 ہزار578 کیسز اور3 ہزار 36 اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔ پنجاب میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 4.84 فیصد ہے۔

لاہور6.19، راولپنڈی4.83 اور فیصل آباد میں شرح3.14 فیصد ہے۔ پاکستان میں70 فیصد نئے کیسز5 بڑے شہروں سے رپورٹ ہوئے ہیں۔ کراچی، لاہور، اسلام آباد، پشاور اور راولپنڈی میں کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے۔

عالمی وبا کورونا وائرس کے سبب پاکستان میں ہونے والی اموات کی شرح2.02 فیصد ہوگئی ہے۔ کورونا سے جاں بحق 76 فیصد افراد کی عمریں 50 سال سے زائد ہیں۔

کورونا سےجاں بحق 72 فیصد کورونا مریض دیگر بیماریوں میں بھی مبتلا تھے۔ کورونا سے جاں بحق افراد میں سے 91 فیصد کا انتقال اسپتالوں میں ہوا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز