چین کیجانب سے شمالی کوریا کو کورونا ویکسین فراہم کیے جانے کا انکشاف

چین کیجانب سے شمالی کوریا کو کورونا ویکسین فراہم کرنے کا انکشاف

فائل فوٹو

امریکی تھنک ٹینک نے دعویٰ کیا ہے کہ چین نے شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان اور ان کے اہلخانہ کو کورونا سے بچاؤ کی تجرباتی ویکسین فراہم کی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی تھنک ٹینک نے جاپانی انٹیلی جنس ذرائع کی فراہم کردہ تفصیلات کا حوالہ دیتے ہوئے کورونا ویکسین کی فراہمی کا دعویٰ کیا تاہم یہ معلوم نہیں کہ کس کمپنی کی دوا فراہم کی گئی اور کیا وہ مؤثر بھی ثابت ہوئی کہ نہیں۔

خیال رہے کہ چین کی 3 دواساز کمپنیاں کورونا ویکسین کی تیاری میں مصروف ہیں جس کے باعث ماہرین کا قیاس ہے کہا ہے کہ کم جونگ ان تجرباتی طور پر یہ ویکسین استعمال کریں گے۔

دعویٰ کیا گیا ہے کہ گزشتہ 2 سے 3 ہفتوں کے درمیان چینی حکومت کی جانب سے شمالی کوریا کی اعلیٰ قیادت کو ویکسین فراہم کی گئی۔

شمالی کوریا میں تاحال کسی کورونا کیس کی تصدیق نہیں کی گئی ہے تاہم جنوبی کوریا انٹیلی جنس کا دعویٰ ہے کہ وہاں کورونا کیسز کے پھیلنے سے انکار نہیں کیا جا سکتا کیونکہ شمالی کوریا کے چین کے ساتھ تجارتی تعلقات ہیں جس کی وجہ سے آمدورفت کا سلسلہ جاری رہتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس: دنیا میں6کروڑ41لاکھ سے زائد کیسز رپورٹ

چین کی سرکاری دوا ساز کمپنی کے مطابق ویکسین کے تجربات جاری ہیں تاہم تاحال کوئی نیتجہ سامنے نہیں آیا ہے۔ ویکسین کی تیاری میں مصروف کمپنیوں میں سائنو بایوٹیک لمیٹڈ، کینسونو بائیو اور چائنا نیشنل فارماسیوٹیکل گروپ شامل ہیں۔

واضح رہے کہ شمالی کوریا نے کورونا کا کوئی کیس سامنے نہ آنے کے باوجود ملک میں انتہائی سخت اقدامات اٹھا رکھے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز