فنڈز نہ ملنے پر اپوزیشن اراکین کا وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور کے باہر رقص

فنڈز نہ ملنے پر اپوزیشن اراکین کا وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور کے باہر رقص

پشاور: فنڈز کی مبینہ غیر منصفانہ تقسیم کے خلاف خیبر پختونخوا اسمبلی میں اپوزیشن اراکین نے وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور کے باہر دوسرے روز بھی احتجاج کیا۔

اپوزیشن اراکین صوبائی اسمبلی نے احتجاج کے دوران روایتی رقص بھی کیا۔ پیپلزپارٹی کی رکن نگہت اورکزئی بھی دیگر اپوزیشن اراکین کے ساتھ رقص کرتی رہیں۔ احتجاجی کیمپ میں سیاسی کارکنوں نے بھی روایتی رقص پیش کیا۔

خیبرپختونخوا کے اپوزیشن اراکین نے فنڈز کی مبینہ غیر منصفانہ تقسیم کے خلاف گزشتہ روز سے احتجاجی کیمپ لگا رکھا ہے۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف کے ایم پی اے پر امتحان میں نقل کرنے کا الزام میں ان کیخلاف ایف آئی آر درج کرا دی گئی ہے۔

ایم پی اے لیاقت علی خان نے  14 اکتوبر کو یونیورسٹی آف ملاکنڈ میں بطور پرائیویٹ امیدوار بی اے کا امتحان دیا تھا۔

مزید پڑھیں: اسکول بیگز کے وزن سے متعلق بل خیبر پختونخوا اسمبلی میں پیش

مالاکنڈ یونیورسٹی انتظامیہ نے لیاقت علی خان پر نقل کرنے کا کیس کردیا تھا۔ کنٹرولر امتحانات نے لیاقت علی خان کا مطالعہ پاکستان  کا پرچہ فیل کرکے نتائج روک دیے ہیں۔

امتحانی بورڈ کی ڈسپلینری کمیٹی نے ایم پی اے کو 17 دسمبر کو طلب کرلیا ہے۔ لیاقت علی لوئر دیر حلقہ 17 سےپی ٹی آئی  کے منتخب  رکن صوبائی اسمبلی ہیں۔

رکن خیبرپختونخوا اسمبلی لیاقت علی نے غلطی تسلیم کرلی ہے۔ انہوں نے مؤقف اپنایا کہ طالب علم سے غلطی ہوتی ہے۔  بحیثیت طالب علم میرے یہ ساتھ سلوک کررہے ہیں تو ٹھیک ہے۔

متعلقہ خبریں